ادلب کی جنگ میں آزاد شامی فوج کی شمولیت - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 12 جنوری, 2018
0

ادلب کی جنگ میں آزاد شامی فوج کی شمولیت

سوچی کی حفاظت کے لئے اردوگان کا پوتین سے انتظامیہ پر دباؤ ڈالنے کا مطالبہ

کل ابو الظہور ایئرپورٹ کے علاقے میں حکومتی فورسز اور ان کے اتحادیوں کے ساتھ جنگ کے دوران ادلب کے اندر میں مخالف جماعتوں کے جنگجوؤں کو دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)

بيروت: نذير رضا انقرة ـ ماسكو: "الشرق الاوسط”

         کل ادلب کی جنگ میں آزاد شامی فوج کی چند ٹکریاں شامل ہوئی ہیں اور گورنریٹ کے اندر شامی انتظامیہ اور اس کے ہمنواؤں کے خلاف حملہ کیا ہے اور یہ حملہ ابو الظہور نامی فوجی ایئرپورٹ کی طرف بڑھتی ہوئی ان کی پیش قدمی کو روکنے کے لیے کیا گیا ہے اور اس کی وجہ سے پڑوسی ملک ترکی کے ساتھ کشیدگی میں اضافہ ہوا ہے۔(۔۔۔)

        فوج اور اس کے ہمنواؤں کی اس پیش قدمی کی وجہ سے اس ترکی کی بے چینی میں زیادتی ہوئی ہے جس کی فوج ادلب کے شمال میں منتشر ہے اور اپنے اڈے ایران اور روس کے ساتھ معاہدہ کے ضمن میں قائم کر رہا ہے۔(۔۔۔) ترکی صدارت کے ذرائع نے کہا ہے کہ ترکی صدر رجب طیب اردوگان نے اپنے روسی ہم منصب فلادیمئر پوٹن سے کل فون پر گفتگو کے دوران آستانہ کی کاروائی اور سوچی سربراہی اجلاس کی کامیابی کے لیے دمشق کے قریب مشرقی الغوطہ اور ادلب پر حملہ بند کرنے کے سلسلہ میں شامی انتظامیہ پر دباؤ ڈالنے کا مطالبہ کیا ہے۔(۔۔۔)

جمعہ – 25 ربيع الثاني 1440 ہجری – 12 جنوری 2018ء  شمارہ نمبر: (14290)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>