فلسطینی "مرکزی کونسل" اسرائیل کی شناخت کو معلق کر رہی ہے - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: منگل, 16 جنوری, 2018
0

فلسطینی "مرکزی کونسل” اسرائیل کی شناخت کو معلق کر رہی ہے

اوسلو معاہدے کی عبوری مدت کے اختتام کا اعلان اور "فلسطینی اتھارٹی کی بجائے ریاست کے قیام کی کوشش”

کل رام اللہ میں زعنون، فلسطینی مرکزی کونسل کے اجلاس کا حتمی بیان پڑھتے ہوئے (ا۔ف۔ب)

 

رام اللہ: کفاح زبون

      فلسطینی تحریک آزادی کی مرکزی کونسل نے تنظیم کی ایگزیکٹو کمیٹی کو "فلسطینی ریاست کو تسکیم کرنے تک اسرائیل کی شناخت کو معلق” کرنے کو کہا ہے اور اوسلو امن معاہدے پر "درج کردہ عبوری مدت” کے اختتام کا اعلان کیا ہے۔

      فلسطینی نیشنل کونسل کے اسپیکر سلیم زعنون نے مرکزی کونسل کے دو روزہ اجلاس کا حتمی بیان پڑھا، جس میں سخت مشاورت دیکھنے میں  آئی۔ انہوں نے کہا کہ "مرکزی کونسل نے خود مختار اتھارٹی سے ریاستی مرحلے میں داخلے کا فیصلہ کی ہے اور جون 1967 کی چہار اطراف سرحدوں پر فلسطینی ریاست کی تشکیل کا آغاز کیا جائے۔ جیسا کہ اوسکو، قاہرہ اور واشنگٹن میں عبوری مدت کا ذکر کیا گیا تھا جن کی پاسداری اب ان کی ذمہ داری نہیں ہے”۔ (۔۔۔)

 

منگل – 29 ربيع الثاني 1439 ہجری – 16 جنوری 2018ء  شمارہ: [14294]
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>