سوچی کی اپیل میں پابندیوں اور تعمیر نو کے سلسلہ میں دمشق کا موقف - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: اتوار, 28 جنوری, 2018
0

سوچی کی اپیل میں پابندیوں اور تعمیر نو کے سلسلہ میں دمشق کا موقف

ڈی میسٹورہ کا شام کے کانفرنس میں شرکت اور کمیٹی کی طرف سے بائیکاٹ کے نتائج کے سلسلہ میں غور وفکر

ویانا مذاکرات کے اختتام کے موقعہ پر ڈی میسٹورہ کو دیکھا جا سکتا ہے(اے ایف پی)

لندن: إبراهيم حميدي

         سوچی اپیل کا ذکر ایک روسی قرار داد میں ہے اور یہ وہ دستاویز ہے جو "شام کی قومی گفتگو کانفرنس” کے اختتام پر نشر ہوگا اور "الشرق الاوسط” نے اس میں بیان کردہ معلومات کو حاصل کیا ہے اور اس میں تعمیر نو، معاشی پابندیوں کو ہٹانے اور سیاسی انتقال کے ساتھ جوڑے بغیر پناہ گزینوں کی واپسی کا تذکرہ ہے جیسا کہ امریکہ اور مغربی ممالک نے مطالبہ کیا ہے۔(۔۔۔)

        اقوام متحدہ کے جنرل سیکریٹری اینٹونیو گوٹیریس نے پیر اور منگل کے دن منعقد ہونے والے "سوچی کانفرنس” میں اقوام متحدہ کے سفیر اسٹیفین ڈی میسٹورا کو حاضر ہونے کی ذمہ داری دی ہے جبکہ مخالف شامی "مذاکرہ کمیٹی” نے بائکاٹ کا اعلان کیا ہے اور اس کمیٹی نے ماسکو گروپ کی طرف سے شرکت کرنے کے اعلان کے بعد بائکاٹ کے فیصلہ کے نتائج کے سلسلہ میں غور وفکر کرنا شروع کر دیا ہے۔

اتوار – 11 جمادی الاول 1440 ہجری – 28 جنوری 2018ء  شمارہ نمبر: (14306)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>