عفرین میں ترک گولہ باری سے شام کی حکومتی افواج کا خیر مقدم - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 21 فروری, 2018
0

عفرین میں ترک گولہ باری سے شام کی حکومتی افواج کا خیر مقدم

ماسکو کی طرف سے انقرہ اور دمشق کو براہ راست مذاکرات کی دعوت ۔۔۔ دو روز کے دوران غوطہ میں 200 ہلاکتیں

شامی حکومت کے حامی ملیشیا کل شام کے شمالی شہر عفرین پہنچ رہے ہیں (ا۔ف۔ب)

 

انقرہ: سعید عبد الرازق – بیروت: نذیر رضا – ماسکو: رائد جبر

     کل ترکی کے صدر رجب طیب اردگان نے کہا ہے کہ شامی حکومت کے حامی جنگجوؤں کے قافلے؛ جو کہ شیعہ باغیوں پر مشتمل ہیں، انہیں شام کے شمال مغربی علاقے عفرین میں داخلے سے روکا گیا اور ترک گولہ باری کے بعد وہ واپس پلٹنے پر مجبور کر دئے گئے، جیسا کہ "رویٹرز” نے مزید کہا ہے کہ یہ قافلہ "دہشت گردوں” کے ساتھ آزادانہ معاملات کرتا تھا۔ ترک صدر نے مزید کہا کہ اس گروہ کو بھاری قیمت ادا کرنا ہوگی۔ (۔۔۔)

      ماسکو کی جانب سے شامی حکومت اور کرد افواج کے مابین مذاکرات پر تحفظات کا اظہار کیا گیا اور اس بارے میں کسی بھی قسم کے مذاکرات میں شرکت نہ کرنے کا اعلان کیا۔ جبکہ کل ماسکو نے وضاحت کی ہے کہ وہ انقرہ اور دمشق کے مابین براہ راست بات چیت کو ترجیح دیتا ہے۔

     دوسری جانب، دمشق کے علاقے مشرقی غوطہ میں اتوار کے روز سے جاری شام کی سرکاری افواج کے فضائی حملوں اور شدید گولہ باری سے تقریبا 200 شہری جان بحق اور درجنوں زخمی ہوگئے ہیں۔ (۔۔۔)

 

بدھ – 5 جمادى الآخرة 1439 ہجری – 21 فروری 2018ء  شمارہ: [14330]
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>