ماسکو اور دمشق غوطہ پر "فتح" حاصل کرنے کے لئے مقابلہ کر رہے ہیں - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: منگل, 20 مارچ, 2018
0

ماسکو اور دمشق غوطہ پر "فتح” حاصل کرنے کے لئے مقابلہ کر رہے ہیں

انقرہ اپنی دراندازی کو وسیع کرنے کے لئے، اور واشنگٹن کا عفرین پر تشویش۔۔۔ اور ڈی مستورا کا شام کی تقسیم سے خبردار

کل دمشق کے مضافات میں مشرقی غوطہ کے علاقے دوما سے انخلا کے منتظر شہری (ا۔ف۔ب)

 

انقرہ: سعید عبد الرازق، دمشق – لندن: "الشرق الاوسط”

      شام کی حکومت کا غوطہ دمشق کے 80 فیصد علاقے پر کنٹرول ہونے اور 73 ہزار شہریوں کے انخلاء کے بعد دمشق اور ماسکو کے مابین اس "کامیابی” کو اپنے نام کرنے کے لئے مقابلہ بازی ظاہر ہوئی ہے۔ دمشق کے اتحادی ذرائع نے تقریبا 545 شامی سرکاری فوجیوں کے ناموں کی ایک فہرست کا انکشاف کیا ہے جو غوطہ پر 18 ماہ سے جاری کاروائی کے دوران ہلاک ہوئے ہیں جبکہ ان میں 35 روسی فوجی بھی شامل ہیں۔ (۔۔۔)

      دوسری جانب، عفرین میں ترک آپریشن کے نتائج پر "شدید تشویش” کا اظہار کیا ہے، اور یہ اس وقت ہے کہ جب انقرہ نے اپنی کاروائی کو "منبج، عین العرب (کوبانی)، تل ابیض، راس العین اور قامشلی” تک وسیع کرنے کا عزم کیا ہے۔ دریں اثناء، کل اقوام متحدہ کے ایلچی سٹیفن ڈی مستورا نے شام میں تقسیم کی جانب بڑھتی ہوئی صورت حال اور شام کے بحران کا حل نہ ہونے کی صورت میں "داعش” کے واپس لوٹنے کے آثار سے خبردار کیا ہے۔

منگل – 3 رجب 1439 ہجری – 20 مارچ 2018ء  شمارہ: [14357]
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

متعلقہ عنوانات‬:, , , , ,
شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>