اسرائیل کا بطش کے قتل کے الزامات کے بعد "قاتلانہ حملوں میں وسعت دینے" کا عزم - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: پیر, 23 اپریل, 2018
0

اسرائیل کا بطش کے قتل کے الزامات کے بعد "قاتلانہ حملوں میں وسعت دینے” کا عزم

بطش کے شاگرد کل کوالالمپور میں سیلایانگ ہسپتال کے پوسٹ مارٹم ہال کے سامنے (ا۔ف۔ب)

 

غزہ – تل ابیب: "الشرق الاوسط”

       اسرائیل نے کل "حماس” رہنماؤں کے خلاف "قاتلانہ حملوں” کو وسعت دینے کے عزم کا اظہار کیا ہے، جبکہ اسرائیل کا یہ عزم پرسوں (بروز ہفتہ) ملائیشیا کے دارالحکومت کوالالمپور میں فادی بطش کے قتل کے بعد تحریک (حماس) کی جانب سے ان کے قتل کا بدلہ لینے کے فیصلہ کے بعد ہے۔

      "حماس” رہنماؤں نے (35 سالہ) بطش؛ جو کہ تحریک میں بغیر پائلٹ کے "ڈرون” کے ماہر شمار کئے جاتے ہیں، ان کے قتل کی ذمہ داری اسرائیلی انٹیلی جنس موساد پر عائد کی ہے۔ تحریک کی سیاسی ونگ کے سربراہ اسماعیل ھنیہ نے کہا ہے کہ تحقیقات سے اشارہ ملتا ہے کہ قتل کی کاروائی میں اسرائیلی انٹیلی جنس موساد ملوث ہے۔ (۔۔۔)

      اسی ضمن میں، اسرائیل نے سرکاری طور پر بطش پر قاتلانہ حملے کا اعتراف نہیں کیا، جبکہ وزیر دفاع اویگڈور لیبرمین نے توقع ظاہر کی ہے کہ یہ کاروائی "دہشت گرد تنظیموں کے مابین اندرونی صفائے کے ضمن میں ہو سکتی ہے”۔

      علاوہ ازیں اسرائیلی وزیر برائے مواصلات انٹیلی جنس اور ایٹمی توانائی یسرایل کٹس نے "حماس” کے رہنماؤں کو خبردار کیا ہے کہ اگر انہوں نے بطش کے قتل کا بدلہ لینے کی کوشش کی۔ (۔۔۔)

 

پیر – 7 شعبان 1439 ہجری – 23 اپریل 2018ء  شمارہ: [ 14391]
الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>