لیری کنگ: کاسٹرو سے ملنے کی خواہش تھی اور روس کے ساتھ میرا کوئی تعلق نہیں - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: پیر, 30 اپریل, 2018
0

لیری کنگ: کاسٹرو سے ملنے کی خواہش تھی اور روس کے ساتھ میرا کوئی تعلق نہیں

اپنے آغاز، درد اور  خوابوں کے بارے میں گفتگو

لندن: عضوان الاحمري

        ذرائع ابلاغ نے اپنا نام اور اپنی زندگی کو تبدیل کر دیا، لارنس ہاروی زیگر سے لیری کنگ ہو گیا، امریکہ کے صوبہ فلوریڈا میں ایک مقامی ریڈیو میں کام کرتے کرتے حالیہ دہائیوں میں مشہور ترین ٹیلی ویژن براڈکاسٹرز بن گیا لیکن ذرائع ابلاغ کے ستاروں میں سے کسی ستارہ کے دل میں کبھی یہ نہیں گزرا ہوگا کہ اسے نہ کہنے والا کوئی ہے اور وہ اس سے ملنے کے قابل بھی نہیں ہے، الشرق الاوسط کے ساتھ ایک طویل انٹرویو میں کینگ نے کہا کہ انہوں نے کیوبا کے رہنما فیدیل کاسٹرو سے ملاقات کرنے کی امید کی تھی اور وہ ملنے کے لیے کوبا بھی گئے تھے۔

       کل کینگ 61 سال کے ہو جائیں گے اور وہ اب بھی مسلسل ریڈیو اور ٹیلی ویژن میں کام کر رہے ہیں اور انہوں نے اپنے اس کام کے دوران دنیا کے دسیوں رہنماؤں سے ملاقات کی اور 60 ہزار سے زائد ٹیلی ویژن انٹرویو بھی لیا اور وہ کینسر اور شوگرکے بارے میں بھی بتایا اور ان کو کس طرح دوسرے پھیپھڑوں کے کینسر سے نجات ملی اور انہوں نے روس کے ساتھ اپنے تعلقات کے بارے میں ہر طرح کی گفتگو کو مسترد کردیا۔(۔۔۔)

پیر – 14 شعبان 1439 ہجری – 30 اپریل 2018ء شمارہ نمبر:  (14398)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>