شام میں سب سے بڑی اسرائیلی فوجی کارروائی کے بعد کشمکش کو کنٹرول کرنے کی کوششیں - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 11 مئی, 2018
0

شام میں سب سے بڑی اسرائیلی فوجی کارروائی کے بعد کشمکش کو کنٹرول کرنے کی کوششیں

28 جہازوں کا تہران اور حزب اللہ کے درجنوں جگہوں پر بمباری اور تل ابیب کے موقف کے لیے امریکی اور برطانوی حمایت

واشنگٹن: هبة القدسي تل ابيب – موسكو – لندن: "الشرق الاوسط”

        ماسکو ایک طرف اسرائیل کی طرف سے ایران اور شام کے درمیان ہونے والی کشمکش کو کنٹرول کرنے کے لیے اور دوسری طرف شامی سرزمین پر ایران کی درجنوں جگہوں پر اسرائیل کی طرف ہونے والے حملوں کے پیش نظر کل ایک مرحلہ میں داخل ہوا ہے اور یہ بھی کہا کہ 1973ء میں ہونے والی جنگ کے بعد دونوں ملکوں کے درمیان ہونے والی جنگ بندی کے بعد سے لے کر اب تک کی یہ سب سے بڑی فوجی کارروائی ہے اور اسرائیل نے کہا کہ یہ حملے 20 میزائل کے جواب میں کئے گئے ہیں اور ان حملوں کے ذمہ دار ایران کی قدس جماعت ہے۔(۔۔۔)

        اسرائیلی فوج نے کہا ہے کہ "F-15” اور "F-16” ماڈل کے 28 جہازوں نے پر ایران کی ان درجنوں جگہوں پر حملہ کرنے میں شرکت کی ہے جن میں ایرانی انٹیلیجنس کی جگہیں، قدس فورس کی لوجسٹک کمان اور دمشق کے شمال میں ایرانی کیمپ کے ہیڈ کوارٹر بھی ہیں اور اسی طرح اس پلیٹ فارم کو بھی برباد کیا گیا ہے جس کے ذریعہ اسرائیل پر میزائل چھوڑا گیا تھا۔

        امریکہ اور برطانیہ نے ایرانی گولہ باری کے بعد خود کا دفاع کرنے کے سلسلہ میں اسرائیل کے حق کی حمایت کی ہے۔ (۔۔۔)

جمعہ– 25 شعبان 1439 ہجری – 11 مئی 2018ء شمارہ نمبر:  (14309)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>