امریکی سفارت خانہ کی منتقلی کا مقابلہ کرنے کے لئے عرب منصوبہ - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعرات, 17 مئی, 2018
0

امریکی سفارت خانہ کی منتقلی کا مقابلہ کرنے کے لئے عرب منصوبہ

قاہرہ: سوسن ابو حسين رام الله: كفاح زبون

        عرب لیگ کونسل نے کل قاہرہ میں مندوبین کی سطح پر ملاقات کے دوران ایک قرار داد پاس کیا ہے جس میں وزرائے خارجہ سے سعودی عرب کی طرف سے جمعرات کو منعقدہ اجلاس کے بعد گفتگو کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

       سفارتی ذرائع نے "الشرق الاوسط” سے نقل کیا ہے کہ منصوبہ کا مقصد نہ صرف بیت المقدس اور غزہ پٹی میں ہونے والے واقعات کی مذمت کرنا ہے بلکہ بیت المقدس کی طرف مزید سفارتخانوں کو منتقل کرنے کے خلاف اقدام کرنا ہے اور ریاستہائے متحدہ اور دنیا کے ممالک سے اس بات کا مطالبہ کرنا ہے کہ وہ مشرقی بیت المقدس کو فلسطین کی حکومت کی دار الحکومت قبول کریں اور مغربی بیت المقدس کو اسرائیل کی دار الحکومت قبول کریں اور امریکہ اور دنیا کے تمام ممالک سے اپیل ہے کہ وسیع پیمانہ پر عدل وانصاف اور امن وسلامتی قائم کریں۔

         ذرائع نے مزید کہا کہ قرارداد بین الاقوامی اداروں سے مطالبہ کرے گا کہ وہ جنرل اسمبلی کے اس قرارداد کی تائید کریں جس میں کو سفارت خانہ کو بیت المقدس منتقل کرنے کے امریکی فیصلہ کو باطل قرار دیا ہے۔(۔۔۔)

جمعرات – 01 رمضان المبارک 1439 ہجری – 17 مئی 2018ء شمارہ نمبر:  (14315)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>