غزہ کے واقعات کے سلسلہ میں بین الاقوامی تحقیقات پر عرب کا دباؤ - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 18 مئی, 2018
0

غزہ کے واقعات کے سلسلہ میں بین الاقوامی تحقیقات پر عرب کا دباؤ

واشنگٹن سے اپنے سفیروں کو بلانے کی تجویز اور ریاض کی طرف سے اسرائیل کی طرف امریکہ کے میلان پر تنقید

قاہرہ: سوسن ابو حسين

        کل قاہرہ میں ملاقاتوں کے دوران عرب وزرائے خارجہ نے عرب لیگ کے جنرل سیکریٹریٹ کو امریکہ یا کسی دوسرے ملک کی طرف سے بیت المقدس کو اسرائیل کی دار الحکومت قرار دینے یا وہاں اپنے سفارت خانہ کو منتقل کرنے کے فیصلہ کے خلاف متحد مکمل منصوبہ تیار کرنے کی ذمہ داری دی ہے اور اس کے لیے جو بھی سیاسی، قانونی اور اقتصادی طریقوں کو اختیار کیا جا سکتا ہے انہیں کیا جانا چاہئے اور دو ہفتوں کے اندر اس منصوبہ کو تمام اراکین ممالک کو بھیجا جائے۔

       وزرائے خارجہ نے سعودی عرب کی طرف سے منعقدہ اپنے غیر معمولی اجلاس کے اختتام کے وقت سلامتی کونسل، اقوام متحدہ کے جنرل اسمبلی، بین الاقوامی تنظیم کے جنرل سیکریٹری، ہیومن رائٹس کونسل اور انسانی حقوق کے ہائی کمشنر سے غزہ پٹی میں اسرائیل کی طرف سے مظاہرین کے خلاف کیے جانے والے جرم کے خلاف بین الاقوامی تحقیقات کی کمیٹی تشکیل دینے کے لیے لازمی کاروائیاں کرنے، اس کمیٹی کو وقتی دائرہ میں میدانی طور پر تحقیق کرنے، اسرائیلی ذمہ داروں سے سوال وجواب کرنے کے سلسلہ میں ایک واضح ادارہ کو نافذ کرنے کی ضمانت دینے، جرم کے سلسلہ میں ان کا محاکمہ کرنے اور سزا سے نہ بچ پانے کا مطالبہ کیا ہے۔

       اسی طرح انہوں نے بین الاقوامی برادری سے فلسطینی شہریوں کے لئے بین الاقوامی تحفظ کو یقینی بنانے کے لئے فوری طور پر مداخلت کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔(۔۔۔) فلسطینی وزیر خارجہ ریاض المالکی نے تجویز پیش کی ہے کہ عرب ممالک واشنگٹن سے مشاورت کے لئے اپنے سفیروں کو واپس بلا لیں اور مالکی نے افتتاحی اجلاس کے دوران کہا کہ واشنگٹن میں موجود عرب ممالک کے سفیروں کو مجموعی طور پر اپنے دار الحکومتوں کی طرف مشورہ کے لئے بلانے میں کوئی بھی نقصان نہیں ہے۔

       اسی سلسلہ میں سعودی عرب کے وزیر خارجہ عادل الجبير نے اسرائیل کی طرف امریکہ کے میلان کی مذمت کی ہے اور پرزور انداز میں کہا ہے کہ امریکی سفارتخانہ بیت المقدس کی طرف منتقل کرنے کا یہ اقدام بین الاقوامی قراردادوں کے خلاف ہے اور انہوں نے مزید کہا کہ سعودی عرب اس اقدام کی مذمت کرتا ہے اور ازسر نو اس بات کی تاکید کرتا ہے کہ یہ اقدام بیت المقدس میں فلسطینی قوم کی تاریخی اور ثابت شدہ حقوق کے خلاف اسرائیل کے حق میں تعصب کا مظہر ہے۔(۔۔۔)

جمعہ – 02 رمضان المبارک 1439 ہجری – 18 مئی 2018ء شمارہ نمبر:  (14316)

 

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>