حریری حلف برداری کے بعد: میرا ترجیحی کام اپنے آپ کو دور رکھ کر عرب کے ساتھ بہتر تعلقات بنانا - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 25 مئی, 2018
0

حریری حلف برداری کے بعد: میرا ترجیحی کام اپنے آپ کو دور رکھ کر عرب کے ساتھ بہتر تعلقات بنانا

بیروت: ثائر عباسی

        لبنان کے صدر جنرل مائیکل عون نے کل ابتدائی مہینہ میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے بعد نیی حکومت کی تشکیل کی ذمہ داری سعد حریری کے سپرد کر دی ہے اور یہ ذمہ داری 128 نمائیندوں میں سے 111 نمائیندوں کی ایک بڑی پارلیمانی اکثریت کے ساتھ دی گئی ہے جبکہ اس سے قبل حزب اللہ کے علاوہ بیشتر مخالف پارٹیوں نے بھی ان ہی کا نام پیش کیا تھا اور حزب اللہ نے کسی دوسرے امیدوار کا نام لینے سے بھی احتراز کیا ہے۔

       صدر حریری نے "الشرق الاوسط” سے گفتگو کرتے ہوئے ایک بیان میں اپنی آئندہ حکومت کی ترجیحات کا ذکر کیا اور کہا ہے کہ آئندہ حکومت کے سامنے بہت سی فوری ایسی ترجیحات ہیں جن میں سب سے اہم لبنان کی حفاظت ان علاقائی خطرات سے کرنا ہے جن کا ہم سب مشاہدہ کر رہے ہیں، اقتصادی حالت اور شام کی نقل مکانی کا بحران ہیں۔ انہوں نے یہ بھی واضح کیا ہے کہ سیاست میں اپنے آپ کو دور رکھ کر عرب بھایوں کے معاملات کے اندر دخل اندازی نہیں کرنا اور ان کے ساتھ بہتر تعلقات کو قائم رکھنا ہے۔(۔۔۔)

جمعہ – 09 رمضان المبارک 1439 ہجری – 25 مئی 2018ء شمارہ نمبر:  (14323)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>