اتحاد کی طرف سے صعدہ کے حملہ میں نشانہ بنائے گئے ناموں کا اعلان - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: ہفتہ, 11 اگست, 2018
0

اتحاد کی طرف سے صعدہ کے حملہ میں نشانہ بنائے گئے ناموں کا اعلان

کل شمال یمن میں واقع الجوف گورنریٹ میں پناہ گزینوں کے درمیان سعودی عرب کی طرف سے تقسیم کی جانے والے امداد کے منظر کو دیکھا جا سکتا ہے

ریاض: "الشرق الاوسط”

           کل یمن میں قانون کی حمایت کرنے والے اتحاد نے صعدہ کے اندر پرسو بیلسٹک میزائل کے ذریعہ کئے جانے والے حملہ کو نافذ کرنے اور اس کا منصوبہ بنانے والے ذمہ دار دہشت گرد حوثی عناصر کے ناموں کا اعلان کیا ہے اور وہ حسین محمد عدلان، یحی عبد المجید العجری، علی محمد الحوری، یحیی حسین البشری، حسین القحوم، مسفر عبد اللہ القرصان، حسین احمد عبد اللہ، احمد عبد اللہ العزی اور عبد العظیم عبد اللہ احمد القاسمی ہیں۔

        اس سلسلہ اور اس کاروائی کی وجہ سے ایک سواری بس کو پہنچنے والے نقصانات کے سلسلہ میں اتحاد کے بلند پایہ ایک ذمہ دار نے سعودی عرب کی واس نامی نیوز ایجنسی کی طرف سے نشر کردہ اپنے بیان میں کہا کہ اتحاد کے رہنماؤں نے اس کام کی کاروائیوں اور اس کے صورتحال کے سلسلہ میں فوری تحقیقات کرنے اور بہت جلد اس کے نتیجہ کا اعلان کرنے کا حکم جاری کیا ہے۔

        دوسری طرف سعودی ایئر ڈیفنس نے اپنی سرزمین کی سمت صعدہ گورنریٹ سے ایران کے تابع حوثی میلیشیاؤں کے طرف سے داغے جانے والے دو بیلسٹک میزائل کو نشانہ پر پہنچنے سے قبل گھیر لیا اور ان دونوں کو جازان کے اوپر برباد کر دیا ہے۔

ہفتہ – 29 ذی قعدہ 1439 ہجری – 11 اگست 2018ء شمارہ نمبر (14501)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>