پابندیوں کے سلسلہ میں گفتگو کرنے کی وجہ سے تہران العبادی پر آگ بگولہ - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: پیر, 13 اگست, 2018
0

پابندیوں کے سلسلہ میں گفتگو کرنے کی وجہ سے تہران العبادی پر آگ بگولہ

بغداد: "الشرق الاوسط”

         عراقی وزیر اعظم حیدر العبادی نے بدھ دن کے ہونے والے تہران کا دورہ نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے کیونکہ امریکی پابندیوں کے سلسلہ میں گذشتہ منگل کو دئے جانے والے بیان کی وجہ سے ایرانی حلقوں میں غیر معمولی گستاخیوں کے سلسلہ میں علم ہوا ہے۔

         پرسو عراق کے ایک سرکاری ذمہ دار نے اعلان کیا ہے کہ العبادی حالیہ سات اگست کو امریکہ کی طرف سے دوبارہ ایران پر لگائی جانے والی پابندیوں کی روشنی میں ترکی اور ایران جیسے دونوں ملکوں اور اپنے ملک کے درمیان ہونے والے اقتصادی تعلقات کے سلسلہ میں مذاکرہ کرنے کے لئے کل انقرہ اور بدھ کو ایران کا دورہ کریں گے اور اس اعلان کے بعد فرانسیسی نیوز ایجنسی نے کل ایک دوسرے ذمہ دار سے اعلان کیا ہے کہ وزیر اعظم صرف انقرہ کا دورہ کریں گے اور انہوں نے مزید کہا کہ ایرانی حکومت نے العبادی پر سابقہ تیاری کے بغیر یہ دورہ کرنے پر زور دیا ہے۔

          اسی سلسلہ میں ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان برہم قاسمی نے تقریبا سرکاری میگزین ایسنا سے کہا ہے کہ ہمارے پاس اس دورہ کی کوئی معلومات نہیں ہے۔

پیر – 02 ذی الحجہ 1439 ہجری – 13 اگست 2018ء شمارہ نمبر (14503)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>