قومی فوج کے ساتھ ادلب کی جنگ میں داخل ہونے کے لئے شمال کی ٹکڑیاں تیار - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: پیر, 13 اگست, 2018
0

قومی فوج کے ساتھ ادلب کی جنگ میں داخل ہونے کے لئے شمال کی ٹکڑیاں تیار

کل شمال شام کے الباب شہر کے اندر مخالف ٹکڑیوں سے نکلی ہوئی قومی فوج کے اہلکار کو دیکھا جا سکتا ہے

بیروت: کارولین عاکوم انقرہ : سعید عبد الرازق

          شمالی شام میں شامی مخالف جماعتیں ترکی کی مدد سے ایک قومی فوج تیار کرنے کا کام کر رہی ہیں اور ممکن ہے کہ یہ فوج صدر بشار الاسد کی طرف سے ملک کے مغربی شمال پر دوبارہ قبضہ کرنے کے سلسلہ میں بہت حد تک رکاوٹ بنے گی اور اسی کے ساتھ انتظامیہ کے نقل وحرکت کو دیکھتے ہوئے ادلب جنگ کی تیاری بھی شروع ہو  چکی ہے۔

           مخالف جماعتوں کو ایک چیلنج کا سامنا ہے اور وہ ایک فرنٹ میں سب کا متحد ہونا ہے جبکہ آج شامی شمال میں دو بنیادی جماعتیں ہو گئیں ہیں اور وہ قومی فوج اور آزادی کی قومی فرنٹ ہیں اور ایسا لگ رہا ہے کہ یہ دونوں بہت قریب ہیں اور ادلب کے ایک فوجی ذمہ دار نے "الشرق الاوسط” سے گفتگو کے دوران کہا کہ دونوں فریق کے متحد ہو جانے کے سلسلہ میں رہنمائی ہو رہی ہے اور اس بات کی بھی وضاحت کی ہے کہ دونوں جماعتوں کا مل جانا کوئی دور نہیں ہے اور ترجیحی طور پر بتایا ہے کہ یہ کام قومی فوج کے نام کے ماتحت ہوگا اور اس بات کی بھی تاکید کی کہ یہ فوج شام کو آزاد کرانے کی فرنٹ میں ہرگز شامل نہیں ہوگی۔

پیر – 02 ذی الحجہ 1439 ہجری – 13 اگست 2018ء شمارہ نمبر (14503)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>