پناہگزینون کی طرف سے واپسی حمایتوں کے ساتھ مربوط - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 15 اگست, 2018
0

پناہگزینون کی طرف سے واپسی حمایتوں کے ساتھ مربوط

ترکی کے سرحد پر شامی پناہ گزینوں کو دیکھا جا سکتا ہے

عمان: محمد الدعمة اور رنيم حنوش انقرة: سعيد عبد الرازق اسطنبول: كمال شيخو بيروت: ايناس شری

         تقریبا 1.7 شامی پناہ گزینوں کو پڑوسی ملک سے اپنے ملک دوبارہ واپس لانے کے سلسلہ میں روس کی طرف سے ہونے والے اقدام نے اس حد تک تنازعہ برپا کر دیا ہے کہ ان پناہ گزینوں کو اپنے یہاں رکھنے والے ترکی، لبنان اور اردن جیسے ممالک کے درمیان اختلاف ہو گیا ہے اور اس کے علاوہ یورپی ممالک کے اندر گفت وشنید بھی شروع ہو چکی ہے اور ان میں خاص طور پر جرمن شامل ہے اور خود پناہ گزیں افراد کے اندر  واپسی کے سلسلہ میں اختلاف ہو چکا ہے جبکہ ان کی بڑی تعداد نے روسی حمایت کے ساتھ واپس ہونے کے سلسلہ میں اصرار کیا ہے۔

       "الشرق الاوسط” نے اردن، کردستان، عراق، لبنان اور ترکی جیسے پڑوسی ممالک میں شامی شہریوں کے سلسلہ میں تحقیقات کیا ہے اور ان ملکوں کے ماہرین اور ذمہ داروں سے روسی افکار کے سلسلہ میں سوال بھی کیا ہے اور اسی طرح شامی افراد کی رائیوں اور اپنے ملک واپس ہونے کے سلسلہ میں ان کے شرائط کا بھی جائزہ لیا ہے لیکن ان سب کے باوجود وہ سیاسی حل موجود نہیں ہے جس کی امید ان شہریوں کی اکثریت کو ہے۔

بدھ – 04 ذی الحجہ 1439 ہجری – 15 اگست 2018ء شمارہ نمبر (14505)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>