یمن کے سلسلہ میں اتحاد کی طرف سے اقوام متحدہ کی رپورٹ اپنی قانونی ٹیم کے سپرد - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 29 اگست, 2018
0

یمن کے سلسلہ میں اتحاد کی طرف سے اقوام متحدہ کی رپورٹ اپنی قانونی ٹیم کے سپرد

کل صنعاء میں گردہ کی صفائی کاروائی میں ایک یمنی شخص کے گردہ کے فیل ہونے کے منظر کو دیکھا جا سکتا ہے

ریاض: "الشرق الاوسط”

        یمن میں قانون کی حمایت کرنے والے اتحاد کے رہنماؤں نے کل اعلان کیا ہے کہ وہ یمن کے بحران کے سلسلہ میں اقوام متحدہ کی طرف سے جاری ہونے والے تمام رپورٹوں کا معائنہ بڑے اہتمام کے ساتھ کریں گے۔

       اتحاد کے رہنماؤں نے کہا کہ حقوق انسان کمیٹی کی حالیہ رپورٹ کو ان کے قانونی ٹیم کے سپرد کر دیا گیا ہے اور مزید کہا کہ قانونی نظر ثانی کے بعد اس سلسلہ میں مناسب قدم اٹھایا جائے گا اور اس کا اعلان بھی کیا جائے گا۔

       اقوام متحدہ میں حقوق انسان کے ماہرین نے یمن میں جنگ کے سلسلہ میں اپنی پہلی رپورٹ جاری کی تھی اور اس رپورٹ کا اعلان اس وقت ہوا جب امریکی وزیر دفاع جیمس ماٹیس نے کل پرزور انداز میں کہا کہ یمن میں ان کے ملک کی طرف سے اتحاد کی مدد کرنے کا فیصلہ سرحد پر اپنا دفاع کرنے کے لئے سعودی عرب کی مدد میں بہت ہی اچھا فیصلہ تھا اور اسی وقت یمن میں قانون کی واپسی کے لئے بھی اچھا فیصلہ تھا۔

بدھ – 17 ذی الحجہ 1439 ہجری – 29 اگست 2018ء شمارہ نمبر (14519)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>