عون کی طرف سے ذمہ داری کے بحران کو پارلیمنٹ کی طرف منتقل کرنے کا اشارہ - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 7 ستمبر, 2018
0

عون کی طرف سے ذمہ داری کے بحران کو پارلیمنٹ کی طرف منتقل کرنے کا اشارہ

بیروت: یوسف دیاب

          لبنان کے صدر جمہوریہ مائکل عون نے کل حکومت بنانے کی ذمہ داری کو پارلیمنٹ کی طرف منتقل کرنے کا اشارہ کیا ہے اور انہوں نے یہ اشارہ اس وقت کیا جب انہوں نے کمیٹی کو ایک پیغام بھیجا جس میں وزیر اعظم سعد الحریری کی ذمہ داری کے مسئلہ کو حل کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے اور انہوں نے حکومت بنانے کے سلسلہ میں ہونے والی بے بسی کے سایہ میں ذمہ داری کے کھلے وقت کو محدود کرنے کی کوشش کی ہے اور پارلیمنٹ کے نائب صدر ایلی الفرزلی نے کہا کہ صدر کی طرف سے پارلیمنٹ کو پیغام بھیجنا صدر کو حاصل دستوری صلاحیتوں میں سے ایک حصہ ہے اور پارلیمنٹ کے صدر نبیہ بری کی ذمہ داری ہے کہ وہ آنے والی میٹنگ میں اس پیغام کو زیر بحث لائیں۔

        لیکن مستقبل کے ایک رہنماء کا کہنا ہے کہ اس پیغام سے وقت ضائع ہوگا(۔۔۔) اور صدر کو ذمہ داری دینے کے مسئلہ میں کچھ بھی تبدیلی نہیں ہوگی اور انہوں نے اشارہ کیا کہ اس مسئلہ کو حل کرنے کا سب سے مختصر طریقہ یہ ہے کہ عون اپنے رشتہ دار جبران باسیل کو ایک پیغام لکھیں اور انہیں رکاوٹیں پیدا کرنے سے باز رہنے کی نصیحت کریں۔

جمعہ – 27 ذی الحجہ 1439 ہجری – 07 ستمبر 2018ء شمارہ نمبر (14528)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>