تہران سربراہی اجلاس کی ناکامی کے بعد ادلب پر سب سے سخت حملہ - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: اتوار, 9 ستمبر, 2018
0

تہران سربراہی اجلاس کی ناکامی کے بعد ادلب پر سب سے سخت حملہ

کل روسی حملہ کے بعد ادلب کے جنوب سے اٹھتے ہوئے دھوئیں کو دیکھا جا سکتا ہے

ماسکو: رائد جبر انقرہ : سعید عبد الرازق

         چند ہفتوں کے دوران ہونے والے حملوں میں کل روسی جہازوں اور شامی حکومت کے ہیلی کاپٹر نے سب سے سخت حملہ کیا ہے اور یہ حملہ شمالی شام کے لئے راستہ کے نقشہ تک پہنچنے کے لئے ایران، ترکی اور روس کے درمیان ہونے والے ایک سربرایی اجلاس کی ناکامی کے بعد ہوا ہے اور جنوبی اور جنوبی مشرقی ادلب کے علاقوں کے گاۏں دیہات پر تین گھنٹوں سے کم وقت میں روسی جہازوں نے ساٹھ حملہ کیا ہے اور اسی کے ساتھ ساتھ میزائل کے ذریعہ حملہ اور گولے بھی داغے گئے ہیں۔

       اسی سلسلہ میں ترکی صدر رجب طیب اردوگان نے ٹیوٹر پر ہونے والے ٹیوٹ کے سلسلہ پرزور انداز میں کہا کہ انتطامیہ کے مفادات کو ترقی دینے کے لئے دسیوں بے قصور لوگوں کو قتل کئے جانے سے اگر پوری دنیا نے آنکھ بند کر لیا تو ہم تماشائی نہیں بنیں رہیں گے اور نہ ہی اس طرح کے کھیل میں شرکت کریں گے۔(۔۔۔)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>