روحانی کی طرف سے سزاؤں کا بجٹ اور اس کے نامعلوم بنود کی تنقید - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 26 دسمبر, 2018
0

روحانی کی طرف سے سزاؤں کا بجٹ اور اس کے نامعلوم بنود کی تنقید

کل ایرانی پارلیمنٹ کے اندر ارکان پارلیمنٹ کو اپنی بات پیش کرنے کے دوران روحانی کا بائکاٹ کرتے ہویے دیکھا جا سکتا ہے

لندن: عادل السالمی

         ایرانی صدر حسن روحانی نے کل ایرانی پارلیمنٹ کے سامنے 21 مارس سے شروع ہونے والے فارسی سال کا بجٹ پیش کیا ہے اور کہا ہے کہ یہ بجٹ امریکی پابندیوں کے بالکل مطابق ہے۔

        ایک طرف روحانی شفافیت کی دعوت دیتے ہوئے بجٹ کے اندر مخفی بندوں کے سلسلہ میں گفتگو کر رہے تو دوسری طرف روئیٹر ایجنسی نے بتایا ہے کہ اعلان کردہ بجٹ کی خصوصیات 47 ارب ڈالر ہے اور موجودہ سال کے مطابق اس میں 37 فیصد کی زیادتی ہے جبکہ فوج کا بجٹ آدھا کم ہو گیا ہے۔

         روحانی نے امریکی انتظامیہ کو نقد کا نشانہ بنایا اور گذشتہ جنوری کے ماہ میں ایران کے اسی شہر میں ہونے والے مظاہرہ کی طرف بھی اشارہ کیا اور اسی وجہ سے واشنگٹن نے ایران کے ساتھ ہونے والے جوہری معاہدہ سے واپسی اختیار کیا اور اس پر دوبارہ پابندی عائد کر دی۔

       دوسری طرف ایران نے پرسو رات انتظامیہ کے مفاد کی تعیینی کمیٹی کے صدر محمود ہاشمی شاہرودی کی وفات پر سرکاری طور پر ایک دن کے سوگ کا اعلان کیا ہے اور اب انتظار ہے کہ ایران کے مرشد اعلی علی خامنئی سرکای طور پر تہران میں جنازہ کی کاروائی پیش کریں گے پھر اس کے بعد انہیں قم شہر لے جایا جائے گا جہاں انہیں دفن کیا جائے گا۔

بدھ 18 ربیع الثانی 1440 ہجری – 26 دسمبر 2018ء – شمارہ نمبر [14638]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>