ٹرمپ عراق میں اور شام سے انخلاء کا دفاع - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعرات, 27 دسمبر, 2018
0

ٹرمپ عراق میں اور شام سے انخلاء کا دفاع

مغربی عراق کے عین الاسد نامی فضائی بیس میں امریکی فورسز کا دورہ کرتے ہوئے ٹرمپ اور ان کی اہلیہ میلانیا کو دیکھا جا سکتا ہے

بغداد: "الشرق الاوسط”

         امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے عراق میں موجود اپنے ملک کی فورسز کو اپنے صدر بننے کے بعد سے اب تک کے پہلے دورہ سے اچنبھے میں ڈال دیا ہے اور یہ دورہ شام سے امریکی فورسز کے انخلاء کے سلسلہ میں ٹرمپ کے فیصلہ کے بارے میں ہونے والے اختلاف کی وجہ سے وزیر دفاع جیمس ماٹیس کی طرف سے دئے جانے والے استعفی کے بعد ہوا ہے اور کل اسی فیصلہ کا دفاع ٹرمپ نے دوبارہ کیا ہے اور کہا کہ بہت سے لوگ میرے فکر سے مطمئن ہیں اور اب وقت آچکا ہے کہ ہم اپنا عقل استعمال کریں۔

       اس کے برعکس ٹرمپ نے پرزور انداز میں کہا کہ وہ عراق سے انخلاء کسی بھی حال میں نہیں کریں گے اور یہ بھی اشارہ کیا کہ وہ اپنی فورسز کو ایک بیس کی طرح یہاں جمع کریں گے تاکہ شام میں ضرورت کے وقت اس کا استعمال کیا جا سکے۔

      مغربی بغداد میں عین الاسد نامی فضائی اس بیس میں صحافیوں سے کہا جہاں انہوں نے اپنی اہلیہ کے ساتھ نئے سال کی مناسبت سے اپنے کے علاقہ میں تین گھنٹہ کا وقت گزارا اور انہوں نے اس سے قبل اپنے مشیر کار سے کہا کہ چلو ہم شام سے نکل جاتے ہیں لیکن انہوں نے ریاستہائے متحدہ کی طرف اپنے دو ہزار فوجی کو واپس ہونے سے وہی رہنے کے سلسلہ میں قانع کر لیا اور پرزور انداز میں کہا کہ نیا وزیر دفاع کے انتخاب کرنے کے سلسلہ میں جلدبازی سے کام لینے کی ضرورت نہیں ہے اور اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا کہ اب وزیر کا کام بیٹریک شاناہان کریں گے ممکن ہے کہ وہ لمبی مدت تک اس عہدہ پر رہیں۔

جمعرات 19 ربیع الثانی 1440 ہجری – 27 دسمبر 2018ء – شمارہ نمبر [14639]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>