العساف: سعودی عرب میں تبدیلی ۔۔۔ میں اور جبیر دونوں مل کر اسے مکمل کریں گے - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: ہفتہ, 29 دسمبر, 2018
0

العساف: سعودی عرب میں تبدیلی ۔۔۔ میں اور جبیر دونوں مل کر اسے مکمل کریں گے

ریاض: "الشرق الاوسط”

          تقرری کے بعد ہونے والے پہلے انٹرویو میں سعودی عرب کے نئے وزیر خارجہ ابراہیم العساف نے فرانس کی نیوز ایجنسی کی طرف سے سعودی عرب کے صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے سلسلہ میں پوچھے جانے والے سوال کا جواب دیتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ ان کا ملک کسی بحران سے نہیں گز رہا ہے بلکہ ان کے ملک میں ایک تبدیلی ہو رہی ہے اور انہوں نے یہ بھی کہا کہ اس معاملہ نے ہمیں بیت زیادہ غمگین کیا ہے لیکن نتیجہ کے طور پر ہم کسی بحران سے نہیں گزر رہے ہیں بلکہ ہم تو ایک قسم کی تبدیلی کا مشاہدہ کر رہے ہیں۔

      عادل الجبیر کو خارجی امور کا ذمہ دار بنائے جانے سمیت وزارتی تبدیلی کے سلسلہ میں العساف نے کہا کہ عادل نے سعودی عرب کی نمائندگی کی ہے اور مسلسل کرتے رہیں گے۔(۔۔۔) اور ہم ایک دوسرے کو مکمل کرنے والے ہیں اور اسی سلسلہ میں ریاستہائے متحدی امریکہ میں سفیر شہزادہ خالد ابن سلمان نے وزراء کو مبارکبادی پیش کی ہے اور جبیر اور عساف کے لئے برکت کی دعا کی ہے اور مزید یہ بھی کہا کہ ان دونوں کی تقرری ڈپلومیٹک کام کی تبدیلی میں بڑا اضافہ ہے۔

ہفتہ 21 ربیع الثانی 1440 ہجری – 29 دسمبر 2018ء – شمارہ نمبر [14641]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>