خلیجی سیاح کا استغلال نہ کرنے کے سلسلہ میں لبنان کی طرف سے ایک اعلان - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: ہفتہ, 16 فروری, 2019
0

خلیجی سیاح کا استغلال نہ کرنے کے سلسلہ میں لبنان کی طرف سے ایک اعلان

بیروت: بولا اسطیح

        لبنان کی وزارت صحت نے اعلان کیا ہے کہ وہ لبنان واپس ہونے کے لیے سعودی عرب کے سیاح کی ہمت افزائی کرنے کے لئے تمام منصوبے اور تمام ترتیبات کرے گی کیونکہ سعودی عرب نے لبنان کے سفر کے لئے تمام پابندیوں کو ختم کر دیا ہے اور یاد رہے کہ یہ پابندیاں 2010ء میں سیکورٹی اسباب کی وجہ سے لگائی گئ تھیں۔

       وزیر سیاحت اویڈیس کیدانیان نے "الشرق الاوسط” سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ لبنان کو سعودی عرب اور خلیج کے سیاحوں کے کئے پروپیگنڈہ کرنے کی ضرورت نہیں ہے کیونکہ وہ ہی لبنان کے علاقہ کو زیادہ جانتے ہیں لہذا آج جس بات کی طرف توجہ دینے کی زیادہ ضرورت ہے انہیں وہ کام کرنے ہیں جن کی وجہ سے سیاحوں کو پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے کیونکہ بعض سیاحی ادارے قیمت میں اضافہ کرکے ان کا استغلال کرتے ہیں اور انہوں نے پرزور انداز میں کہا کہ اس استغلال کو بند کرنے کے لئے تمام کاروائیاں کی جائیں گی اور ہم نے سنہ 2018ء میں ہی ایک ریڈ لائن کا قیام کیا جس کے ذریعہ سیاحت کرنے والے اپنی ہر قسم کی پریشانی کی شکایت کر سکتے ہیں۔

      وزیر نے ترجیحی انداز میں کہا کہ آخری فیصلہ سعودی عرب کے سیاح کے لئے بہت مثبت ہوگا اور لبنان کی معیشت پر بھی اس کا اثر پڑے گا اور خلیجی سیاح کے ساتھ ساتھ خاص طور پر سعودی عرب کے سیاح اس سے مستفید ہوں گے کیونکہ لبنان کی سیاحت کے لئے یہ تو ریڑھ کی ہڈی کے مانند ہے اور انہوں نے تعداد کی زیادتی کے سلسلہ میں بتایا کہ سعودی عرب کے فیصلہ کی وجہ سے سیاحوں کی تعداد میں اضافہ دیکھنے کو ملا ہے۔

ہفتہ 11 جمادی الآخر 1440 ہجری – 16 فروری 2019ء – شمارہ نمبر [14690]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>