زاہدان دھماکہ میں ایران کا پاکستان پر الزام اور سعودی عرب اور امارات کے خلاف دھمکیاں - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: اتوار, 17 فروری, 2019
0

زاہدان دھماکہ میں ایران کا پاکستان پر الزام اور سعودی عرب اور امارات کے خلاف دھمکیاں

گذشہ بدھ کو ہونے والے اس زاہدان دھماکہ میں ہلاک شدہ پاسداران انقلاب کے ستائس افراد کے جسموں کو منتقل کرنے کے منظر کو دیکھا جا سکتا ہے

جدہ: ابراہیم القرشی

        ایران نے گذشتہ بدھ کو زاہدان میں ہونے والے بم دھماکہ کے اس واقعہ کا استغلال کرکے پاکستان پر الزام عائد کیا ہے کہ وہ اس حملہ میں شامل ہے اور یاد رہے کہ اس حملہ میں پاسداران انقلاب کے ستائس افراد ہلاک ہوئے ہیں جبکہ سعودی عرب اور امارات کے خلاف بھی دھمکیاں دی گئی ہیں۔

      ایرانی پاسداران انقلاب کے کمانڈر میجر جنرل محمد علی جعفری نے کل ایک ٹیلیویزن انٹرویو میں پاکستانی حکومت کے سیکورٹی فورسز پر حملہ کرنے والی جماعت کی مدد کرنے کا الزام لگایا ہے اور جعفری نے سعودی عرب اور امارات کو بھی اس حملہ کے لئے سہولت فراہم کرنے کی وجہ سے دھمکی دی ہے۔

      "الشرق الاوسط” کے ساتھ گفتگو کرنے والے سیاسی تجزیہ نگار ڈاکٹر خالد الہباس نے ان الزامات کے بارے میں کہا کہ اس طرح کے الزامات مایوسی کی وجہ سے ظاہر ہو رہے ہیں کیونکہ ایران ابھی بین الاقوامی سماج کی طرف سے بہت زیادہ دباؤ کی حالت میں جی رہا ہے اور انہوں نے مزید کہا کہ سعودی عرب اور امارات کا شمار ان ممالک میں ہے جو علاقہ کے اندر ایران کے تخریبی کردار کو اجار کر رہے ہیں اور اسی وجہ سے ایران کے لئے آسان ہے کہ وہ صرف ریاض اور ابو ظبی پر الزام لگا سکتا ہے۔(۔۔۔)

اتوار 12 جمادی الآخر 1440 ہجری – 17 فروری 2019ء – شمارہ نمبر [14691]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>