قاہرہ میں بم دھماکہ کرنے والے کو امریکا اور فرانس نے واپس کر دیا - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 20 فروری, 2019
0

قاہرہ میں بم دھماکہ کرنے والے کو امریکا اور فرانس نے واپس کر دیا

کل قاہرہ میں ازہر مسجد کے قریب درب احمر علاقہ کے اندر ہونے والے کود کش حملہ کی جگہ مصر کی خاص فورسز کو دیکھا جا سکتا ہے

قاہرہ: محمد عبدی حسین

         ایک طرف اہل مصر نے پرسو قاہرہ کے اندر ازہر مسجد کے قریب ہونے والے بم دھماکہ میں اپنی جان گنوانے والے تین پولس کے جنازہ کو کندھا دیا تو دوسری طرف اس بات کا انکشاف ہوا کہ حملہ کرنے والے کا نام حسن عبد اللہ تھا اور اس کی عمر 37 سال ہے اور بچوں کے ڈاکٹر کا بیٹا ہے اور وہ 25 سال قبل امریکہ جا چکا تھا اور وہ دینی انتہاپسندی سے معوروف تھا۔

      ذرائع نے مزید کہا کہ بیٹا اپنے والد کے ساتھ فرانس بھیجے جانے اور اس کے بعد مصر دوبارہ بھیجے جانے سے قبل امریکہ منتقل ہوا تھا اور آنکھوں سے دیکھنے والے گواہوں نے بتایا کہ بیٹا سائکل کے ذریعہ گیس سلینڈر بیچا کرتا تھا اور وہ کبھی کبھی ڈاکٹری لباس بھی پہنتا تھا اور سیکورٹی ذرائع نے بتایا کہ قاہرہ کے درب احمر علاقہ میں اس کے گھر کے اندر وقت سے مربوط دھماکہ خیز مواد ملے ہیں جسے پولس نے ناکام بنا دیا ہے اور بم بنانے والے مواد بھی ملے ہیں۔(۔۔۔)

بدھ 15 جمادی الآخر 1440 ہجری – 20 فروری 2019ء – شمارہ نمبر [14694]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>