حزب اللہ کے جواب میں سنیورہ کا پیغام: فاسد انسان ہی چھوٹے چھوٹے ملک بناتا ہے - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: ہفتہ, 2 مارچ, 2019
0

حزب اللہ کے جواب میں سنیورہ کا پیغام: فاسد انسان ہی چھوٹے چھوٹے ملک بناتا ہے

پریس کانفرنس کے دوران صد فؤاد سنیورہ کو دیکھا جا سکتا ہے

واشنگٹن: ایلی یوسف ۔ بیروت: "الشرق الاوسط”

         کل لبنان کے سابق صدر فؤاد سنیورہ نے حزب اللہ کی طرف سے لگائے گئے ان الزامات کا جواب دیا جو ان پر سنہ 2006 سے سنہ 2017 کے دوران لگائے گئے تھے اور حزب اللہ کا الزام یہ تھا کہ ان کے زمانہ حکومت میں گیارہ ارب ڈالر فنڈ سے غائب ہوا تھا۔

      مستقبل جماعت اور 14 آذار کے چند رہنماؤں کی موجودگی میں سنیورہ نے پریس کانفرنس میں کہا کہ بعض لوگ ایسے ہیں جو اپنے کام پر پردہ ڈالنے کے لئے لوگوں کی نگاہ دوسری چیزوں کی طرف متوجہ کر رہے ہیں اور انہوں نے پرزور انداز میں کہا کہ سیاسی فاسد وہ شخص ہے جو ایک ملک کے اندر چھوٹے چھوٹے ملک قائم کرے اور صرف اپنے مفادات پر توجہ رکھے اور دستوری استحقاق کو معطک کرکے قانون کے درمیان حائل ہو اور انہوں نے اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا کہ ان حملوں کا مقصد ان تمام حکومتوں کی صورت بگاڑنی ہے جو رفیق الحریری کی صدارت میں تھیں اور ان کا اور ان کے بعد آنے والے تمام صدر کا مذاق اڑانا ہے جن میں سعد الحریری بھی ہیں۔(۔۔۔)

ہفتہ 25 جمادی الآخر 1440 ہجری – 02 مارچ 2019ء – شمارہ نمبر [14704]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>