تہران کے خلاف پابندیوں کے سلسلہ میں خلیجی تائید اور ہرمز بند کرنے کی تردید - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 24 اپریل, 2019
0

تہران کے خلاف پابندیوں کے سلسلہ میں خلیجی تائید اور ہرمز بند کرنے کی تردید

ریاض ۔ واشنگٹن: الشرق الاوسط

     کل خلیجی ممالک نے ایران کے خلاف لگائی جانے والی امریکی پابندیوں کی تائید کی ہے کیونکہ سعودی عرب کے وزیر خارجہ ابراہیم العساف نے پرزور انداز میں کہا کہ ان کا ملک ان نئی کاروائیوں کی امداد کرتا ہے کیونکہ دنیا کے اندر دہشت گردی کی تعاون کرنے اور امن واستقرار کو نشانہ بنانے والی سرگرمیوں کو روکنے کے لئے تہران کی انتظامیہ پر دباؤ ڈالنے کے لیے یہ ضروری ہے۔ اسی طرح منامہ نے ایرانی تیل کی درآمدات کو زیرو کرنے کے مقصد سے امریکی کاروائیوں کا استقبال یہ کہ کر کیا ہے کہ دہشت گردی کے چشموں کو خشک کرنے کے لئے یہ اہم ہیں۔(۔۔۔)

     اسی سلسلہ میں امریکی وزارت خارجہ کے ذمہ دار نے پرزور انداز میں کہا کہ ان کا ملک ایران سے مطالبہ کرتا ہے کہ وہ ہرمز اور باب المندب کو کھلا رکھے اور سخت انداز میں کہا کہ وہ دونوں گذرگاہ میں نیویگیشن کی آزادی، تجارت اور پٹرولیم کی آزادی کا احترام کرے۔(۔۔۔)

بدھ 19 شعبان المعظم 1440 ہجری – 24 اپریل 2019ء – شمارہ نمبر [14756]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>