خالد ابن سلمان کی طرف سے تہران پر فرقہ واریت اور تقسیم کو فروغ دینے کا الزام - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعرات, 25 اپریل, 2019
0

خالد ابن سلمان کی طرف سے تہران پر فرقہ واریت اور تقسیم کو فروغ دینے کا الزام

کل ماسکو میں بین الاقوامی امن کانفرنس میں شرکت کرتے ہوئے شہزادہ خالد ابن سلمان کو دیکھا جا سکتا ہےماسکو: رائد جبر

        کل ماسکو میں منعقدہ بین الاقوامی امن کانفرنس کے پہلے دن بین الاقوامی بحران کو ہوا دینے کی کوششوں اور دنیا کے موجودہ چیلنجز کا مقابلہ کرنے کے سلسلہ میں میں تعاون کو فروغ دینے کی دعوتوں کے بارے میں گفتگو ہوئی ہے۔

      اسی سلسلہ میں سعودی عرب کے نایب وزیر دفاع شہزادہ خالد ابن سلمان نے اپنی افتتاحی گفتگو میں پرزور انداز میں کہا کہ سعودی عرب امن وسلامتی کی فروغ کے لئے کی جانے والی بین  الاقوامی کوششوں میں غیر معمولی شرکت کرنے کے سلسلہ میں مستعد ہے اور انہوں نے یہ بھی کہا کہ سعودی عرب مشرق وسطی کی صورت حال کی طرف بہت ہی بے چینی کی نگاہ سے دیکھتا ہے۔(۔۔۔)

     شہزادہ خالد ابن سلمان نے مزید کہا کہ ایران فرقہ واریت اور تقسیم کو مسلسل ہوا دے رہا ہے اور ایک قومی ملک کا اعتراف نہیں کر رہا ہے اور وہ سرحد پر انقلابی فکر کے ساتھ معاملہ کر رہا ہے اور انہیں کاموں میں دہشت گردوں کی تربیت ہے اور ہتھیار اور مال کے ذریعہ میلیشیاؤں اور دہشت گرد جماعتوں کی مدد کرنی ہے۔(۔۔۔) 

جمعرات 20 شعبان المعظم 1440 ہجری – 25 اپریل 2019ء – شمارہ نمبر [14757[

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>