سوڈان میں کشیدگی ختم ہونے کے اشارہ کے ساتھ آزادی اور تبدیلی کے رہنماؤں کی طرف سے دھرنہ ختم کرنے کی بات - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: بدھ, 12 جون, 2019
0

سوڈان میں کشیدگی ختم ہونے کے اشارہ کے ساتھ آزادی اور تبدیلی کے رہنماؤں کی طرف سے دھرنہ ختم کرنے کی بات

کل خرطوم میں مخبز کے سامنے لوگوں کو لائن میں دیکھا جا سکتا ہے

خرطوم: احمد یونس ۔ محمد امین یاسین

     دار الحکومت اور دیگر مختلف شہروں میں زندگی کو معمول سے ہٹانے والی مکمل شہری نافرمانی کے تین دنوں کے بعد حکومت کرنے والی انتقالی فوجی کونسل اور تحریک کی قیادت کرنے والی آزادی وتبدیلی کے رہنماؤں نے انتقالی مرحلہ کی ترتیبات کے سلسلہ میں دوبارہ مذاکرہ شروع کرنے کا معاہدہ کیا ہے جبکہ اس سے قبل تین جون کو ہونے والے دھرنہ کے میدان میں قتل عام سے پہلے یہ مذاکرات ختم ہو گئے تھے۔

    ایتھوپیائی وزیر اعظم کی طرف سے سوڈان بھیجے گئے سفیر نے کل ایک پریس کانفرنس میں اس معاہدہ کا اعلان کیا ہے اور اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا کہ مذاکرات کو جاری رکھنے کے لیے  فوجی کونسل نے سیاسی گرفتار افراد کو رہا کرنے اور آزادی وتبدیلی کے رہنماؤں نے دھرنہ کو ختم کرنے کی منطوری دی ہے اور بریر نے یہ بھی کہا کہ انہوں نے فوجی کونسل کے صدر عبد الفتاح البرہان، کونسل کے اراکین، آزادی وتبدیلی کے رہنماؤں اور دیگر سرگرم سیاست داں افراد سے ملاقات کی ہے اور یہ سب ایتھوپیا کے وزیر اعظم احمد آبی کی طرف سے دونوں فریق کے درمیان قربت پیدا کرنے کے اقدام کو مکمل کرنے کے لئے کیا جا رہا ہے اور انہوں نے یہ بھی واضح کیا کہ دونوں فریق نے سابقہ مذاکرات میں جن باتوں پر اتفاق کیا ہے ان سے پیچھے نہ ہٹنے پر بھی معاہدہ کیا ہے۔(۔۔۔)

بدھ 08 شوال المکرم 1440 ہجری – 12 جون 2019ء – شمارہ نمبر [14806]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>