برطانوی ٹینکر مغربی مداخلت کی وجہ سے ایران کے قبضہ سے آزاد - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 12 جولائی, 2019
0

برطانوی ٹینکر مغربی مداخلت کی وجہ سے ایران کے قبضہ سے آزاد

ایرانی ٹینکر سے قریب ایک کشتی کی تصویر دیکھی جا سکتی ہے

واشنگٹن: ایکی یوسف ۔ لندن: الشرق الاوسط

       واشنگٹن اور لندن کی مداخلت کی وجہ سے برطانیہ کا ایک تیل کا ٹینکر خلیجی پانی کے اندر ایران کے قبضہ میں جانے سے بچ گیا کیونکہ پاسداران انقلاب کی کشتیوں نے گذشتہ رات سے قبل ٹینکر کو گزرنے نہ دینے بلکہ اسے روکنے کی کوشش اس وقت کی تھی جب کشتی ہرمز گذرگاہ کی طرف بڑھ رہی تھی۔

      کل ایک بیان میں برطانوی حکومت کے ایک ترجمان نے بتایا کہ بین الاقوامی قانون کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ایران کی تین کشتیوں نے ہرمز گذرگاہ میں تجارتی کشتی کو گذرنے نہ دینے کی کوشش کی ہے اور انہوں نے اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا کہ رائل بحریہ نے اس کشتی کو بچانے کے لئے مداخلت کا طریقہ اختیار کیا جو کشتی برطانوی پٹرولیم شیپنگ کی تھی۔

      انہوں نے یہ بھی واضح کیا کہ فریگیٹ کو ایرانی کشتیوں، برطانوی ہیئرٹیج اور واپس ہونے والے ایرانی کشتیوں کے خلاف زبانی دھمکیاں دینے کے لیے پوزیشن اختیار کرنا پڑا اور ترجمان نے مزید کہا کہ ہم پریشان ہیں اور ہم علاقہ کے اندر کشیدگی کو کم کرنے کے سلسلہ میں ایران کو آمادہ کرتے رہیں گے۔(۔۔۔)

جمعہ 09 ذی قعدہ 1440 ہجری – 12 جولائی 2019ء – شمارہ نمبر [14836]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>