امریکی جنگی جہاز نے ہرمز کے اندر ایک ایرانی جہاز کو مار گرایا - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 19 جولائی, 2019
0

امریکی جنگی جہاز نے ہرمز کے اندر ایک ایرانی جہاز کو مار گرایا

واشنگٹن: ہبہ القدسی ۔ الخرج سعودی عرب: صالح الزید لندن ۔ ٹوکیو: الشرق الاوسط

      کل ایرانی پاسداران انقلاب کی طرف سے خلیج میں چند دن پہلے گم شدہ ایک غیر ملکی ٹینکر کے کے روکے جانے کے اعلان کے چند گھنٹوں بعد امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے اعلان کیا کہ کل ہرمز گذرگاہ میں ایک امریکی فوجی جنگی جہاز نے ایرانی جہاز کو اس وقت مار گرایا جب وہ اس کے قریب آ گیا تھا۔

     ٹرمپ نے کہا کہ ایرانی جہاز یو اس اس باکسر کشتی سے ایک ہزار گز سے کم کی مسافت پر آگیا تھا جس کی وجہ سے جنگی کشتی کو اقدام کرنا پڑا اور اس اقدام کی وجہ سے ایرانی جہاز تباہ وبرباد ہو گیا۔

     ٹرمپ نے یہ بھی کہا کہ بین الاقوامی پانی میں کام کرنے والی کشتیوں کے خلاف ایران کی طرف سے دشمنی اور اشتعال انگیزی پر مبنی کاروائیوں کی طویل داستان کی ایک کڑی ہے اور انہوں نے مزید کہا کہ ریاستہائے متحدہ کو ہمارت کاندے اور مفادات کی حفاظت کرنے کا حق حاصل ہے اور وہ ہر ملک کو عالمی تجارت اور ایویگیشن کی آزادی کے سلسلہ میں ایران کی طرف سے رکاوٹ پیدا کرنے کی کوشش کی مذمت کرنے کی دعوت دیتا ہے۔(۔۔۔)

جمعہ 16 ذی قعدہ 1440 ہجری – 19 جولائی 2019ء – شمارہ نمبر [14843]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>