مشترکہ کام کی سطح کو بڑھانے کے لئے امریکی فورسز کے استقبال کے سلسلہ میں سعودی عرب کی منظوری - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: ہفتہ, 20 جولائی, 2019
0

مشترکہ کام کی سطح کو بڑھانے کے لئے امریکی فورسز کے استقبال کے سلسلہ میں سعودی عرب کی منظوری

خادم حرمین شریفین شاہ سلمان ابن عبد العزیز کو دیکھا جا سکتا ہے

ریاض: الشرق الاوسط

      کل سعودی عرب کی وزارت دفاع کے ایک ذمہ دار نے واضح کیا ہے کہ ریاستہائے متحدہ امریکہ اور سعودی عرب کے درمیان ہونے والے مشترکہ تعاون کے آغاز کرنے اور ملک کی امن وسلامتی اور استقرار واستحکام کی حفاظت کو مضبوط بنانے کے لئے تمام فوجی فورسز کے اعلی کمانڈر خادم حرمین شریفین شاہ سلمان ابن عبد العزیز نے ملک کی امن وسلامتی اور استقرار واستحکام کی حفاظت کے سلسلہ میں مشترکہ کام کی سطح کو بڑھانے کے لئے امریکی فورسز کے استقبال کی منظوری دے دی ہے۔

      خادم حرمین شریفین کے اس فیصلہ میں اس بات کی تاکید ہے کہ امریکہ اور سعودی عرب کے تعلقات مزید مضبوط ہوں گے اور دونوں ملک کے درمیان تعاون مزید بڑھے گا اور باخبر ذرائع نے یہ بھی بتایا ہے کہ سعودی عرب کی طرف سے امریکی فورسز کا استقبال دونوں ملکوں کے مابین فوجی تعاون کو مسلسل قائم رکھنا ہے اور اس کا مقصد ایران پر مزید دباؤ ڈالنا ہے اور اسے مزید کشیدگی پیدا کرنے سے باز رکھنا ہے۔(۔۔۔)

ہفتہ 17 ذی قعدہ 1440 ہجری – 20 جولائی 2019ء – شمارہ نمبر [14844]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>