ایران کی طرف سے تیسرے تیل ٹینکر کو حراست میں لینے کا اعلان اور اس کا ایک جنگجو جہاز چکناچور - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: پیر, 5 اگست, 2019
0

ایران کی طرف سے تیسرے تیل ٹینکر کو حراست میں لینے کا اعلان اور اس کا ایک جنگجو جہاز چکناچور

کل پاسداران انقلاب کی طرف سے تیل ٹینکر کو اپنے حراست میں لینے کے اعلان کے بعد ایک ایرانی چینل کی طرف سے نشرکردہ تیل ٹینکر کی تصویر کو دیکھا جا سکتا ہے

واشنگٹن: ہبہ القدسی لندن: الشرق الاوسط

       کل ایرانی پاسداران انقلاب نے اعلان کیا ہے کہ اس نے گذشتہ بدھ کے دن خلیج کے پانی میں فارسی جزیرہ کے قریب تیسرے غیر ملکی تیل ٹینکر کو اپنے حراست میں لے لیا ہے اور اسی جگہ سے قریب ایران کی سب سے بڑے فوجی اڈہ کے قریب ایرانی پانی کے اوپر "فانٹوم اف4” نامی ایرانی جنگجو جہاز ٹوٹ کر چکنا چور ہو گیا ہے۔

       ایران کے جنوب میں واقع بوشہر علاقہ کے اندر پاسداران انقلاب کی ایویگیشن کے دوسرے علاقہ کے رہنماء نے کہا کہ ان کے فورسز نے ایک غیر ملکی ٹینکر کو اپنی حراست میں لے لیا ہے اور پاسداران انقلاب کے ذرائع ابلاغ سے فرانسیسی نیوز ایجنسی نے نقل کیا ہے کہ مذکورہ فورسز نے فضائی حکومت کے ساتھ تنسیق کرکے اس ٹینکر کے سات غیر ملکی افراد کو بھی روک رکھا ہے۔

      پہلی خبر میں پاسداران انقلاب نے اعلان کیا کہ اس ٹینکر میں سات سو ہزار لیٹر غیر قانونی تیل ہے اور چند گھنٹوں کے بعد ارنا نامی سرکاری ایجنسی نے اعلان کیا کہ اسے ایک ریکارڈنگ بھی ملی ہے جس سے پتہ چلتا ہے کہ یہ ٹینکر ایرانی ہے اور اس میں ڈیزل موجود ہے۔(۔۔۔)

پیر 04 ذی الحجہ 1440 ہجری – 05 اگست 2019ء – شمارہ نمبر [14860]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>