کشمیر میں ہندوستانی کشیدگی کے بعد بین الاقوامی تشویش کا اظہار اور پاکستان کی طرف سے انتباہ - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: منگل, 6 اگست, 2019
0

کشمیر میں ہندوستانی کشیدگی کے بعد بین الاقوامی تشویش کا اظہار اور پاکستان کی طرف سے انتباہ

کل لاہور میں کشمیر کے اندر ہونے والی ہندوستانی کارروائیوں کے خلاف مظاہرہ کے منظر کو دیکھا جا سکتا ہے

اسلام آباد: جمال اسماعيل – نيودلهي: «الشرق الاوسط»

        پاکستان نے گذشتہ روز ہندوستان کی طرف سے سات دہائیوں سے کشمیر کو حاصل "خصوصی حیثیت” کے خاتمے کے اعلان کے رد عمل سے آگاہ کیا ہے اور اس کاروائی کی وجہ سے مسلم اکثریت والے اس خطہ میں تشدد وانتہا پسندی کے خدشات بڑھ گئے ہیں۔

       وزیر اعظم نریندر مودی کی جماعت نے ایک قدم آگے بڑھ کر جموں کشمیر کی خصوصی حیثیت کو ختم کرنے کے سلسلہ میں ایک صدارتی فرمان جاری کیا ہے جبکہ ان کو یہ خصوصی حیثیت ہندوستانی آئین کے مطابق ملا ہوا تھا اور اسی طرح اس پارٹی نے کشمیر کے ہندوستانی حصے کو دو علاقوں میں تقسیم کرنے کا بل بھی پیش کیا ہے اور یہ دونوں علاقے براہ راست مرکزی حکومت کے اختیار میں ہوں گے۔

      پاکستانی وزارت خارجہ نے ہندوستان کے اس اقدام کی مذمت میں تاخیر نہ کرتے ہوئے اسے "غیر قانونی” قرار دیا ہے اور اپنے نشرکردہ بیان میں کہا کہ پاکستان اس بین الاقوامی تنازعہ کا حصہ ہے اور وہ اس غیر قانونی اقدامات کا مقابلہ کرنے کے لئے تمام دستیاب اختیارات کا سہارا لے گا جبکہ آج پاکستان کے اعلی فوجی کمانڈروں کی ایک میٹنگ ہوئی ہے۔(۔۔۔)

منگل 05 ذی الحجہ 1440 ہجری – 06 اگست 2019ء – شمارہ نمبر [14861]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>