پاکستان کی طرف سے ہندوستان کے سفیر کو جانے اور اس سے تجارتی تعلقات بند کرنے کا فیصلہ - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعرات, 8 اگست, 2019
0

پاکستان کی طرف سے ہندوستان کے سفیر کو جانے اور اس سے تجارتی تعلقات بند کرنے کا فیصلہ

کل اس شرینگر کے علاقہ میں ہندوستانی فورسز کو گردش کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے جو لوگوں سے خالی ہو چکا ہے

نیویارک: علی بردی اسلام آباد: جمال اسماعیل

        نیودلہی کے ساتھ مزید تعلقات کو ختم کرنے کے فیصلہ کے ساتھ پاکستان نے اعلان کیا ہے کہ اس کے اور ہندوستان کے درمیان ڈپلومیٹک تعلقات کم ہو جائیں گے اور اس نے ہندوستانی سفیر کو واپس جانے اور اپنے سفیر کو واپس بلانے کا فیصلہ بھی کیا ہے اور اسی طرح ہندوستان کے تجارتی تعلقات ختم کرنے کا اعلان کیا ہے اور اسی طرح پاکستانی فورسز کے درمیان کافی نقل وحرکت کا ماحول بھی ہے۔

      یہ سب کاروائی اس وقت ہوئیں جب ہندوستان نے کشمیر کے لئے ہندوستان قانون میں موجود خصوصی حیثیت کو ختم کر کے پورے علاقہ کو دو حصوں میں تقسیم کیا ہے اور اسے مرکزی حکومت سے جوڑ دیا ہے اور اسی کے ساتھ ہندوستان میں نیو دلہی کے خلاف مظاہرے بھی ہو رہے ہیں اور کل پاکستان نے ایک ہنگامی میٹنگ بلائی ہے تاکہ ہندوستانی جانب سے ہونے والی ان خلاف ورزیوں کے سلسلہ میں غور وفکر کیا جا سکے۔(۔۔۔)

جمعرات 07 ذی الحجہ 1440 ہجری – 08 اگست 2019ء – شمارہ نمبر [14863]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>