خالد بن سلمان اور ایسپر کے درمیان خلیج میں تعاون، یمن اور نیوی گیشن سیکیورٹی کے سلسلہ میں تبادلۂ خیال - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 30 اگست, 2019
0

خالد بن سلمان اور ایسپر کے درمیان خلیج میں تعاون، یمن اور نیوی گیشن سیکیورٹی کے سلسلہ میں تبادلۂ خیال

گذشتہ روز پینٹاگون میں بات چیت کے دوران شہزادہ خالد بن سلمان اور مارک ایسبر کو دیکھا جا سکتا ہے

واشنگٹن: ایلی یوسف

       سعودی عرب کے نائب وزیر دفاع شہزادہ خالد بن سلمان نے گذشتہ روز واشنگٹن کے اندر امریکی وزیر دفاع مارک ایسپر کے ساتھ ایک میٹنگ منعقد کی جس میں انہوں نے خطے کے علاقائی صورتحال اور دونوں ملکوں کے مابین دوطرفہ تعاون کے سلسلہ میں بات چیت کی۔

      امریکی وزارت دفاع یعنی پینٹاگون کے ذرائع کے مطابق اس بات کا علم ہوا ہے کہ پینٹاگون میں ہونے والے اس میٹنگ کے دوران دونوں ممالک کے مابین فوجی تعاون میں اضافہ کرنے کی بات ہوئی ہے اور ایک مکمل حل تک پہنچنے کے لئے یمن کے امور کے سلسلہ میں بھی گفتگو ہوئی ہے اور اس کے علاوہ خلیج میں نیوی گیشن سکیورٹی کو یقینی بنانے کے لئے سیکیورٹی تعاون کے ہم آہنگی پر بھی تبادلۂ خیال ہوا۔

      اسپیر نے وزیر دفاع کے عہدے پر فائز ہونے کے بعد اپنی پہلی پریس کانفرنس میں کہا کہ واشنگٹن ایرانی دھمکیوں سے اپنے اتحادیوں کا دفاع کرنے کے لئے پرعزم ہے اور انہوں نے اس بات پر بھی زور دیا کہ واشنگٹن خلیج کے علاقہ میں بحری ایویگیشن کو محفوظ بنانے کے لئے متعدد ممالک سے گفتگو کر رہا ہے۔(۔۔۔)

جمعہ 29 ذی الحجہ 1440 ہجری – 30 اگست 2019ء – شمارہ نمبر [14885]

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>