سلامہ: بیرون ملک سے لیبیا کا کوئی حل نہیں...انہوں نے الشرق الاوسط کو بتایا کہ ان کا وفد خاموش اکثریت کے ساتھ ہے - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: اتوار, 6 اکتوبر, 2019
0

سلامہ: بیرون ملک سے لیبیا کا کوئی حل نہیں…انہوں نے الشرق الاوسط کو بتایا کہ ان کا وفد خاموش اکثریت کے ساتھ ہے

غسان سلامہ کو دیکھا جاسکتا ہے ( روئٹرز)

قاہرہ: جمال جوہر

لیبیا کی طرف بھیجے گئے اقوام متحدہ کے جنرل سیکرٹری کے نمائندے غسان سلامہ نے یقین دہانی کی ہے کہ ان کی کوشش اس عرب ملک میں بندوق کی آوازوں کو خاموش کرنا ہے ، انہوں نے کہا کہ اس جنگ کا واحد شکار جس نے لیبیا کو مزید تقسیم اور قتل و غارتگری سے نقصان پہنچایا ہے وہ لیبیا کا شہری ہے ۔ الشرق الاوسط کے ساتھ گفتگو کے دوران سلامہ نے زور دیتے ہوئے کہا کہ لیبیائی بحران کا حل خود اہل لیبیا پر منحصر ہے ، اورکہا کہ باہرسے ان پر کسی کو مسلط نہیں کیا جاسکتا۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ”لیبیائی امور اور بین الاقوامی شراکت داروں سے وابستہ تمام ممالک کے درمیان اب یہ اعتراف بڑھتا جارہا ہے کہ جنگ کے خاتمے اور سیاسی عمل کو دوبارہ زندہ کرنے کے لئے سیاسی حل ہی ایک واحد علاج ہے۔ یہ اعتراف اس بین الاقوامی کانفرنس کی کامیابی کے امکانات کو پیش کرتا ہے جس کے انعقاد کے لئے ہم کوشش کررہے ہیں۔ (…)(اتوار  7  صفر 1441 ہجرى/ 6  اکتوبر 2019ء شماره نمبر 14913)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>