مشرقی فرات میں شدید لڑائیاں ... اور ٹرمپ کی طرف سے انقرہ کو سزا دینے کی اجازت - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: ہفتہ, 12 اکتوبر, 2019
0

مشرقی فرات میں شدید لڑائیاں … اور ٹرمپ کی طرف سے انقرہ کو سزا دینے کی اجازت

شام کے شمال مشرق میں واقع سرحدی دیوار کو عبور کرنے والی ترک بکتر بند گاڑی کو دیکھا جاسکتا ہے ( ا۔ف۔ب)

انقرہ: سعید عبد الرازق – واشنگٹن: ایلی یوسف – ماسکو:  رائد جبر – پیرس: میشال ابو نجم

امریکی وزیر خزانہ اسٹیفن منوچن نے پرزور انداز میں کہا ہے کہ اگر انقرہ شام کے شمال مشرق میں فوجی کارروائی کے بارے میں ٹرمپ کی طرف سے تحدید کردہ دائروں پر عمل نہیں کرتا ہے تو ، صدر ڈونلڈ ٹرمپ جلد ہی ترکی کے خلاف "انتہائی اہم نئی پابندیوں” کی اجازت دینے کے لئے ایک ایگزیکٹو آرڈر پر دستخط کردیں گے۔ سعودی وزیر مملکت برائے امور خارجہ عادل الجبیر عرب وزراء خارجہ کی کونسل کے ہونے والے ہنگامی اجلاس میں شرکت کے لئے گذشتہ روز قاہرہ پہنچ گئے ہیں ، یہ ہنگامی اجلاس "ترکی کے حملے” پر تبادلہ خیال کے لئے آج منعقد ہوگا ہے۔ امریکی وزیر دفاع مارک ایسپر نے اپنے ترک ہم منصب خلوصی آکار سے ٹیلیفون گفتگو کے دوران "ترکی پر زور دیا کہ وہ اس حملے کو روکیں” ، اور اسی طرح انہوں نے داعش کے خلاف اتحاد پر کارروائی کے مضمرات کے بارے میں تشویش کا اظہار بھی کیا (…)(ہفتہ  13  صفر 1441 ہجرى/ 12  اکتوبر 2019ء شماره نمبر 14913)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>