اردگان اپنے موقف سے ہٹے پیچھے اور مشرقی فرات میں کی جنگ بندی کی حمایت - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعہ, 18 اکتوبر, 2019
0

اردگان اپنے موقف سے ہٹے پیچھے اور مشرقی فرات میں کی جنگ بندی کی حمایت

ترک صدر کو کل امریکی نائب صدر کا استقبال کرتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے(ا۔ب)

انقرہ: سعید عبد الرازق – واشنگٹن: ایلی یوسف- ماسکو: رائد جبر

امریکی نائب صدر مائک پینس نے گذشتہ روز انقرہ میں ترک صدر رجب طیب اردگان سے ملاقات کے بعد کہا ہے کہ ترکی شام کے شمال مشرق میں جنگ بندی پر راضی ہے ، جسے اردگان کے اپنے سابقہ ​​موقف سے پسپائی سمجھا جارہا ہے۔ پینس نے کہا کہ امریکہ اور ترکی شام کے "محفوظ خطے” کے بارے میں پرامن معاہدے پر دستخط کرنے کے لئے پرعزم ہیں ، جس کا مشترکہ مقصد داعش کو شکست دینا ہے ، اور اس کے ساتھ ساتھ ترکی کو کرد اکثریتی شہر عین العرب (کوبانی) میں فوجی کارروائی میں ملوث نہیں ہونا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ معاہدے کے تحت متفقہ علاقے سے کرد عوامی تحفظ یونٹ کی واپسی کی سہولت فراہم کی گئی ہے۔ دوسری طرف ، ترک فوج نے تصدیق کی ہے کہ مشرقی فرات میں آپریشن «امن کے موسم بہار» کو روکنے کے لئے بھی امریکی وفد کے ساتھ معاہدہ کیا گیا ہے ۔ (…)(جمعہ  19  صفر 1441 ہجرى/ 18  اکتوبر 2019ء شماره نمبر 14913)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>