ایرانی اداروں کے خلاف خلیج - امریکہ کی پابندیاں - الشرق الاوسط اردوالشرق الاوسط اردو
الشرق اردو
به قلم:
کو: جمعرات, 31 اکتوبر, 2019
0

ایرانی اداروں کے خلاف خلیج – امریکہ کی پابندیاں

فوجی پریڈ کے دوران باسیج ملیشیاؤں کو دیکھا جاسکتا ہے ( ایرانی مرشد سائٹ)

ریاض: سعید الابیض

خلیج تعاون کونسل (جی سی سی) کی ریاستوں اور امریکہ نے ایران سے منسلک 25 اداروں کو نامزد کیا ہے ، خاص طور پر باسیج ، لبنانی بینکوں ، اور حزب اللہ جماعت کے رہنماؤں کو دہشت کردی کی فہرستوں میں شامل کیا ہے۔ چھ خلیجی ریاستوں اور امریکہ کی مشترکہ نامزدگی 2017 میں قائم کردہ دہشت گردی کی مالی اعانت کے اہداف سینٹر کے ذریعہ عمل میں آئی ہے ۔ امریکی وزیر خارجہ مائک پومپیو نے کل کہا تھا کہ یہ قراردادیں "دنیا کو ایران سے بچانے کے لئے اضافی اقدامات” کی نمائندگی کرتی ہیں۔ امریکی وزارت خزانہ کا کہنا تھا کہ انسداد دہشت گردی فنانسنگ سینٹر کی جانب سے اختیار کردہ یہ مشترکہ پابندیاں ابھی تک کی سب سے اہم پابندیاں ہیں۔ دہشت گردی کے فنانسنگ ٹارگٹینگ سینٹر میں سعودی عرب اور اس کے شراکت داروں کے درمیان ریاستی سلامتی کے صدر نے ایک بیان میں کہا ہے کہ یہ اقدام مرکز کی زندگی کی سب سے بڑی مشترکہ نامزدگی ہے، انہوں نے مزید کہا کہ بہت ساری ٹارگٹ کمپنیاں باسیج فورسز کو مالی مدد فراہم کرتی ہیں، جنھیں ایرانی حکومت طویل عرصے سے فورسز کی بھرتی ، ان کی تربیت اور خطے میں دہشت گردانہ حملے کے لئے استعمال کرتی رہی ہے۔ (…)(جمعرات 3  ربیع الاول 1441 ہجرى/ 31  اکتوبر 2019ء شماره نمبر 14913)

الشرق اردو

الشرق اردو

«الشرق الاوسط» چار براعظموں کے 12 شہروں میں بیک وقت شائع ہونے والا دنیا کا نمایاں ترین روزنامہ عربی اخبار ہے، 1978ء میں لندن كي سرزميں پر میں شروع ہونے والا الشرق الاوسط آج عرب اور بین الاقوامی امور ميں نمایاں مقام حاصل كر چکا ہے جو اپنے پڑھنے والوں کے لئے تفصیلی تجزیے اور اداریے کے ساتھ ساتھ پوری عرب دنیا کی جامع ترین معلومات پیش کرتا ہے- «الشرق الاوسط» دنیا کے کئی بڑے شہروں میں بیک وقت سیٹلائٹ کے ذریعہ منتقل ہونے والا عربی زبان کا پہلا روزنامہ اخبار ہے، جیسا کہ اس وقت یہ واحد اخبار ہے جسے عظیم الشان بین الاقوامی اداروں کے لئے عربی زبان میں شائع ہونے کے حقوق حاصل ہیں جہاں سے «واشنگٹن پوسٹ»،

More Posts - Website - Twitter - Facebook

شيئر

تبصرہ کریں

XHTML/HTML <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>