جزائر کی صدارتی انتخابات کے مقابلہ میں پانچ امید وار

جزائر کی صدارتی انتخابات کے مقابلہ میں پانچ امید وار

ان میں ابن فلیس، تبون اور میہوبی ہیں
اتوار, 3 November, 2019 - 16:00
جزائر کی دار الحکومت کے مرکزی علاقہ میں چوتھے روز اپنی ہڑتال کو جاری رکھنے والے ججوں کے احتجاج کے منظر کو دیکھا جا سکتا ہے
        آئندہ ماہ بارہ تاریخ کو جزائر کے اندر ہونے والے صدارتی انتخابات کے مقابلہ میں پانچ امیدوار ہیں جن میں سے تین سابق صدر عبد العزیز بوتفلیقہ کے قریب تھے اور وہ سابق وزیر اعظم علی ابن فلیس، عبد المجید تبون اور وزیر ثقافت عز الدین میہوبی ہیں جبکہ سترہ افراد کے نام کو ان کی فائل میں انتخابات کے قانون میں ذکر کردہ شروط نہ ہونے کی وجہ سے اس مقابلہ سے علیحدہ کر دیا گیا ہے جن میں سابق وزیر بلقاسم ساحلی ہیں جو اس بوتفلیقہ کے پانچويں بار امیدواری کے سلسلہ میں بہت زیادہ دفاع کر رہے تھے جسے عوامی تحریک نے مسترد کر دیا ہے۔
       آزاد انتخابی اتھارٹی کے صدر محمد شرفی نے کل دار الحکومت کی ایک پریس کانفرنس میں امیدواروں کی فائلوں پر غور وفکر کئے جانے کے نتائج سے باخبر کیا ہے اور یہ بھی بتایا کہ قومی تعمیراتی تحریک کے صدر عبد القادر ابن قرینہ نے امتحان میں کامیابی حاصل کی ہے اور یاد رہے کہ اس میدان میں تن تنہا اسلام پسند یہی ہیں اور یہ صدر الیامین زروال اور مستقبل کی فرنٹ پارٹی کے صدر بلعید عبد العزیز کے عہد میں سیاحت کے وزیر تھے اور یاد رہے کہ بلعید سنہ 2014ء کے انتخابات میں امیدوار تھے۔(۔۔۔)

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا