سیستانی کے ذریعہ پرسکون ہونے کے مطالبہ کا کوئی اثر نہیں

سیستانی کے ذریعہ پرسکون ہونے کے مطالبہ کا کوئی اثر نہیں

ہفتہ, 9 November, 2019 - 17:15
کل سیکیورٹی اہلکاروں کو بغداد کی ایک گلی میں ٹیمپو گاڑی کو توڑتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے
        گذشتہ روز سکون کے لئے اعلی شیعہ عالم دین علی السیستانی کی طرف سے پرسکون ہونے کی دعوت پر کسی نے توجہ نہیں دی مگر ہزاروں افراد بغداد اور باقی وسطی اور جنوبی صوبوں کے شہروں میں مظاہرہ کرنے کے لئے نکلے اور معمول کے مطابق سیکیورٹی فورسز نے آنسو گیس کے ذریعہ جواب دیا۔
        بغداد میں مرکزی بینک اور صوبہ بصرہ میں ام قصر کی بندرگاہ کے قریب پہنچتے ہی احتجاج نے ایک شدید موڑ لیا اور خبر رساں ایجنسی روئٹرز کے مطابق اس بات کا علم ہوا ہے کہ گذشتہ روز کربلا میں خطبہ جمعہ کے موقع کے دوران سیستانی کے نمائندہ شیخ عبد المہدی کربلائی کی طرف سے پرامن احتجاج کرنے کی دعوت کے باوجود مظاہرین اور سیکیورٹی فورسز کے درمیان خاص طور پر بغداد میں جھڑپیں ہوئی ہیں اور اسی طرح انہوں نے سیکیورٹی فورسز سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ پرامن مظاہرین سے نمٹنے کے لئے تشدد کے استعمال سے گریز کریں۔(۔۔۔)
ہفتہ 12 ربیع الاول 1441 ہجرى - 09 نومبر 2019ء شماره نمبر [14956]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا