حریری پر مخلوط حکومت قبول کرنے کا دباؤ

حریری پر مخلوط حکومت قبول کرنے کا دباؤ

مالی بحران سے لبنان کے مریض متاثر اور دوائیوں کے ختم ہونے کی آگاہی
اتوار, 24 November, 2019 - 15:30
پرسو یوم آزادی کے سرکاری جشن کے موقع پر وزیر اعظم عون اور حریری کے مابین ایک سرد مصافحہ کے منظر کو دیکھا جا سکتا ہے
        ایک وزارتی ذریعہ نے حکومت کے ذمہ دار وزیر اعظم سعد حریری پر مخلوط حکومت کے سامنے ہتھیار ڈالنے کے دباؤ کا انکشاف کیا ہے اور اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا ہے کہ ماہرین کی حکومت کو مسترد کرنے والی قوتیں خاص موقف کے لئے تیار ہیں اور حریری پر ہر طرح کی نفسیاتی اور میڈیا کا دباؤ ڈال رہی ہیں تاکہ وہ ان شرائط کے ساتھ قبول کرنے پر مجبور ہوں۔
        وزارتی ذریعہ کا کہنا ہے کہ وہ جو طاقتیں ٹیکنو سیاسی حکومت پر اصرار کر رہی ہیں وہ حریری کی رضامندی کے بغیر ان کے متبادل کی تلاش میں کامیاب نہیں ہو سکتی ہیں۔
        انہوں نے پرزور انداز میں یہ بھی کہا کہ حریری کے منصب پر کوئی شک نہیں ہے اور انہیں حکومت کی سربراہی کے لئے دوسروں کا نام پیش کرنے پر بھی کوئی اعتراض نہیں ہے، لیکن اگر پارلیمانی بلاکس نے ان لازمی مشاورت میں ان کے نام پر اصرار کیا جو تاحال زیر التوا ہیں تو ان کا موقف معلوم ہے اور اس میں کوئی تنازع نہیں ہے اور وہ ماہرین کی حکومت کی تشکیل پر مبنی ہے اور انہوں نے اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا کہ بین الاقوامی برادری مستعفی ہونے کو خوش کرنے کے لئے پردے کی طرح آنے والی حکومت کے حامی نہیں ہے۔(۔۔۔)
اتوار 27 ربیع الاول 1441 ہجرى - 24 نومبر 2019ء شماره نمبر [14971]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا