لندن کا حملہ آور دھوکا دے کر جیل سے فرار

لندن کا حملہ آور دھوکا دے کر جیل سے فرار

داعش کی طرف سے اعتراف اور لاہائی مارکیٹ کا حملہ آور گرفتار
اتوار, 1 December, 2019 - 15:30
برطانوی وزیر اعظم، ہوم سکریٹری اور میٹرو پولیٹن پولیس کمشنر کو کل لندن واقعہ کا جائزہ لیتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
        برطانوی پولیس نے ہفتہ کے روز لندن برج پر چھریوں کے ذریعہ کئے جانے والے اس حملہ کے مجرم کی شناخت  کر لی ہے جس میں پولیس کے ذریعہ حملہ آور کے ہلاک ہونے سے قبل دو افراد ہلاک ہوگئے تھے۔ داعش کی طرف سے اعتراف کئے گئے حملہ نے برطانیہ کی سیاسی جماعتوں کے مابین تنازعہ کھڑا کردیا ہے جبکہ یہ انکشاف ہوا ہے کہ حملہ آور عثمان خان کو اس سے پہلے دہشت گردی کا مرتکب قرار دیا گیا تھا اور اسے دھوکہ دہی کے ذریعہ رہا کیا گیا تھا کیونکہ وہ یہ ثابت کرنا چاہتا تھا کہ اس نے شدت پسندی ترک کردی ہے۔
        28 سالہ خان 2012 میں ہونے والے دہشت گردی پر مبنی جرائم میں ملوث تھا اور وہ پولس کے یہاں مطلوب بھی تھا اور اسے 2018 کے آخر میں جیل سے اس شرط کے ساتھ نکالا گیا تھا کہ وہ اپنے نقل وحرکت کو محدود کرے گا اور وہ جیل بحالی اجلاسوں میں شرکت کرنے کا پابند ہوگا۔(۔۔۔)
اتوار 4 ربیع الآخر 1441 ہجرى - 01 دسمبر 2019ء شماره نمبر [14977]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا