عراق کے متحدہ مظاہرے کی وجہ سے حکام کے درمیان ڈر وخوف کی لہر

عراق کے متحدہ مظاہرے کی وجہ سے حکام کے درمیان ڈر وخوف کی لہر

منگل, 10 December, 2019 - 10:45
گذشتہ رات قتل ہونے والے کارکن فاہم الطائي کے نعش کو کربلا میں تدفین کے لئے لے جاتے ہوئے ایک بہت بڑے ہجوم کے منظر کو دیکھا جا سکتا ہے (رائٹرز)
        ایسا معلوم ہوتا ہے کہ عراق کے مختلف گورنریٹ کے ہزاروں کارکنوں کی شرکت کے ساتھ آج بغداد میں ہونے والے متحدہ مظاہرے کی وجہ سے عراقی حکام اور ان کے مسلح دھڑوں کے مابین خوف وہراس کی لہر پھیل گئی ہے اور خاص طور پر جب یہ خبر آرہی ہے کہ مظاہرین گرین زون پر حملہ کرنے والے ہیں۔
        مظاہروں کے بارے میں مسلح گروہوں اور دھڑوں کی طرف سے جاری کردہ انتباہ کے جواب میں تحریر اسکوائر کے مظاہرین نے ایک بیان جاری کیا ہے جس میں کہا ہے کہ عراق کے ظالم مواقع کو غنیمت سمجھ کر بغاوت کو دبانے کے لئے سازشیں کر رہے ہیں اور امن وسلامتی کے طریقہ کو تشدد اور تصادم کی طرف موڑ رہے ہیں۔(۔۔۔)
منگل 13 ربیع الآخر 1441 ہجرى - 10 دسمبر 2019ء شماره نمبر [14987]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا