ایران کی جارحیت کا مقابلہ کرنے کے لئے سعودی عرب کی طرف سے خلیجی یکجہتی پر زور

ایران کی جارحیت کا مقابلہ کرنے کے لئے سعودی عرب کی طرف سے خلیجی یکجہتی پر زور

تعاون سربراہی اجلاس میں اتحاد واتفاق کی اہمیت پر زور
بدھ, 11 December, 2019 - 07:30
کل ریاض کے اجلاس میں شاہ سلمان کو خلیج تعاون کونسل کے رہنماؤں کے درمیان میں دیکھا جا سکتا ہے (ایس پی اے)
        گذشتہ روز ریاض میں ہونے والے خلیج سربراہی اجلاس کے اختتامی بیان میں عرب خلیجی ممالک کے تعاون کونسل کے ممالک کے مابین تعاون کو مضبوط بنانے، متحد خلیجی عوام کے مابین اتحاد واتفاق قائم کرنے اور اس خطے میں امن وسلامتی، استحکام اور خوشحالی کو برقرار رکھنے کے سلسلہ میں کونسل کے کردار کو بلند کرنے کی اہمیت پر زور دیا گیا ہے۔
        ریاض کے بیان میں معاشی اتحاد کی حصولیابی اور عالمی مسابقت کی ضروریات کو مکمل کرنے پر بھی زور دیا گیا ہے اور ان کاموں میں نوجوانوں کو متحرک اور بااختیار بنانا، ان کو کاروباری سرگرمی کی ترغیب دینا ، اور مشترکہ عمل کے میکنزم کو ترقی دینا بھی شامل ہے۔
        خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبد العزیز نے  40ویں خلیج سربراہی اجلاس کے افتتاحی موقع پر پرزور انداز میں کہا ہے کہ یہ خطہ جن حالات اور چیلنجوں سے گزر رہا ہے ہمیں ان کا مقابلہ کرنے کے لئے یکجہتی کے ساتھ کوشش کرنے کی ضرورت ہے اور شاہ سلمان نے یہ بھی کہا کہ ایرانی حکومت دشمنی پر مبنی اپنی سرگرمیاں مسلسل انجام دے رہی ہے لہذا ہمیں اپنے ممالک کے فوائد، اپنے عوام کے مفادات کا تحفظ، اس حکومت کی مداخلت کو روکنے کے لئے عالمی برادری کے ساتھ مل کر کام کرنے، اس کے جوہری اور بیلسٹک میزائل کی ترقیاتی پروگرام کے سلسلہ میں سنجیدگی کے ساتھ کام کرنے، توانائی کے ذرائع کی حفاظت، آبی گزرگاہوں کی سلامتی اور سمندری بحریہ کی آزادی کے سلسلہ میں سنجیدگی کے ساتھ کام کرنے کی ضرورت ہے۔(۔۔۔)
بدھ 14 ربیع الآخر 1441 ہجرى - 11 دسمبر 2019ء شماره نمبر [14988]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا