طرابلس میں جنگ تیز اور حفتر کی افواج اس کے دہانے پر

طرابلس میں جنگ تیز اور حفتر کی افواج اس کے دہانے پر

ترکی کا ایک ڈرون جہاز ہلاک اور فرانس، جرمن اور اٹلی کی طرف سے لڑائی روکنے کا مطالبہ
ہفتہ, 14 December, 2019 - 12:15
دار الحکومت طرابلس کے جنوب میں ہونے والی لڑائی کے ایک منظر کو دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
        فیلڈ مارشل خلیفہ حفتر کی سربراہی میں لیبیا کی نیشنل آرمی فورسز دار الحکومت طرابلس کے دروازہ پر پہنچ چکی ہے اور اس کے تمام مراکز پر قابو پانے کی جنگ شدت اختیار کرتی جارہی ہے۔
        نیشنل آرمی کے ایک سینئر عہدیدار نے بتایا ہے کہ آرمی یونٹوں نے چیف کمانڈر فیلڈ مارشل خلیفہ حفتر کی ہدایت کے مطابق دار الحکومت طرابلس پر حملہ کرنا شروع کردیا ہے جبکہ اقوام متحدہ کی طرف سے حمایت یافتہ الوفاق کے سربراہ فائز السراج نے اپنی اس فوج کی پامردی کا ذکر کیا ہے جس نے نویں مہینے سے مسلسل  جاری لڑائی میں پیچھے ہٹنے کا انکار کیا ہے۔
        عہدیدار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط کے ساتھ الشرق الاوسط سے گفتگو کرتے ہوئے ایک مختصر بیان میں مزید کہا ہے کہ فوج کے لئے لڑائی کے تمام گوشے متحرک ہیں اور کاروائی کے آغاز کا اعلان بھی کیا جا چکا ہے اور مسلح افواج کمانڈر چیف کی طرف سے جاری کردہ ہدایات پر عمل درآمد کریں گی۔(۔۔۔)
ہفتہ 17 ربیع الآخر 1441 ہجرى - 14 دسمبر 2019ء شماره نمبر [14991]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا