ترک پارلیمنٹ کی طرف سے لیبیا میں فوجی مداخلت کی راہ ہموار

ترک پارلیمنٹ کی طرف سے لیبیا میں فوجی مداخلت کی راہ ہموار

منگل, 17 December, 2019 - 12:45
گذشتہ روز قبرص کے شمالی علاقہ فاماگستا میں واقع گیگٹ فورٹ کے ہوائی اڈہ پر "بائریکدار ٹی پی 2" کے قسم کے ترک ڈرون جہاز کو دیکھا جا سکتا ہے
        گذشتہ روز ترک پارلیمنٹ نے لیبیا میں فوجی مداخلت کی راہ ہموار اس وقت کی ہے جب اطلاع ملی کہ انقرہ طرابلس میں فوجی اڈہ قائم کرنے کا منصوبہ بنا رہا ہے۔
       رجب طیب اردگان اور وفاقی حکومت کے وزیر اعظم فائز السراج کے درمیان فوجی اور سیکیورٹی تعاون سے متعلق افہام وتفہیم کے دستاویز پر ہونے والے دستخط کی توثیق کے سلسلہ میں ترک پارلیمنٹ کی خارجہ تعلقات سے متعلق ایک کمیٹی نے اپنی منظوری کا اعلان کر دیا ہے اور ترک صدر رجب طیب اردگان نے کہا ہے کہ اس نے سنہ 1920 میں ہونے والے سیویرس معاہدہ (فرانس) کی صورتحال کو پلٹ کر رکھ دیا ہے۔
        اسی سلسلہ میں اطلاعات میں یہ بھی انکشاف ہوا ہے کہ ترکی طرابلس میں فوجی اڈہ قائم کرنے کا ارادہ رکھتا ہے اور اخبار "نیوز ترک" نے بے نام ذرائع کے حوالہ سے بتایا ہے کہ ترکی نے اڈہ کے لئے فزیبلٹی اسٹڈیز مکمل کرلی ہے۔(۔۔۔)
منگل 20 ربیع الآخر 1441 ہجرى - 17 دسمبر 2019ء شماره نمبر [14994]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا