حفتر کی فورسز کی طرف سے طرابلس کے محلوں میں جنگِ کرنے کی تیار

حفتر کی فورسز کی طرف سے طرابلس کے محلوں میں جنگِ کرنے کی تیار

انقرہ لیبیا کے دار الحکومت میں فوجی اڈہ قائم کرنے کے لئے تیار
ہفتہ, 28 December, 2019 - 12:30
پرسو لیبیا کے دار الحکومت طرابلس کے مغرب میں واقع زاویہ شہر کو نشانہ بنانے والے ایک فضائی حملے کے بعد معائنہ کرتے ہوئے اہل لیبیا کو دیکھا جا سکتا ہے
         فیلڈ مارشل خلیفہ حفتر کی سربراہی میں لیبیا کی نیشنل آرمی فورسز نے طرابلس کے ارد گرد محاصرہ سخت کردیا ہے اور اس کے ترجمان احمد المسماری نے اعلان کیا ہے کہ وہ دار الحکومت کے محلوں میں لڑائی لڑنے کی تیاری کر رہے ہیں۔
         المسماری نے "العربیہ" چینل سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ آنے والے وقت میں ہونے والی پیشرفتوں سے تمام لیبیا کے لوگ حیرت زدہ ہو جائیں گے اور انہوں نے اس بات کی طرف بھی اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ مخصوص فورسز طرابلس کے مرکزی محلوں کی لڑائی میں داخل ہونے کی تیاری کر رہی ہیں۔
         اسی کے ساتھ ترکی کی وزارت دفاع کی خاتون ترجمان نديدة شبنام اكطوب نے گذشتہ روز انقرہ میں ہونے والی ایک پریس کانفرنس میں اس بات کی تصدیق کی ہے کہ ترک مسلح افواج احکامات ملنے پر لیبیا کی طرف فوج بھیجنے کے لئے تیار ہے جبکہ لیبیا میں ترک سفیر امر الله ايشلار نے تصدیق کی ہے کہ ضرورت پڑنے پر ان کا ملک قطر اور صومالیہ میں اپنے فوجی اڈے کی طرح طرابلس میں ایک فوجی اڈہ قائم کرنے کے لئے تیار ہے۔(۔۔۔)
ہفتہ 02 جمادی الاول 1441 ہجرى - 28 دسمبر 2019ء شماره نمبر [15005]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا