تہران اور کویت کے مابین سفارتی بحران کے آثار

تہران اور کویت کے مابین سفارتی بحران کے آثار

احواز کے حزب اختلاف کی کانفرنس کی میزبانی کے پس منظر میں اختلاف
اتوار, 29 December, 2019 - 10:30
مرزوق الغانم کو احواز وفد کے ایک رکن کو قومی اسمبلی کی شیلڈ دیتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے
          تہران نے کویت میں ایران مخالف کانفرنس کے پس منظر میں گذشتہ روز کویت سفارت خانہ کا کام انجام دینے والے آفیسر کو طلب کیا ہے۔
         "مہر" نامی نیوز ایجنسی نے اطلاع دی ہے کہ کویت میں اسلامی جمہوریہ کے خلاف منعقدہ ایک کانفرنس کے منعقد ہونے، وہاں ایران کی مخالف جماعتوں کے دہشت گرد رہنماؤں کا استقبال کرنے اور کویت کے کچھ عہدیداروں کے ذریعہ ایران کے مخالف بیانات دینے کے سلسلہ میں احتجاج درج کرتے ہوئے ایرانی وزارت خارجہ نے کویتی سفارت خانہ کا کام انجام دینے والے آفیسر کو طلب کیا ہے اور بیان کے مطابق ایرانی وزارت خارجہ نے کویتی سفارت خانہ کا کام انجام دینے والے آفیسر کو ایک سخت الفاظ میں احتجاجی میمورینڈم دیا ہے۔
          ایرانی حزب اختلاف کی ایک ویب سائٹ نے تصویر کے ساتھ ایک رپورٹ شائع کی ہے جس میں کویتی پارلیمنٹ کے اسپیکر مرزوق الغانم نے رکن پارلیمنٹ عبد اللہ فہاد العنزی کی موجودگی میں احواز عرب جدوجہد تحریک کے وفد کو کونسل شیلڈ سے نوازا ہے اور "احواز کے لئے پارلیمنٹیرینز" کے عنوان سے کویت میں منعقدہ اجلاس کے موقع پر احواز کے وفد کے رکن حکیم الکعبی نے اس شیلڈ کو حاصل کیا ہے۔
اتوار 03 جمادی الاول 1441 ہجرى - 29 دسمبر 2019ء شماره نمبر [15006]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا