لبنان: حکومت بنانے کی کوششیں ناکام

لبنان: حکومت بنانے کی کوششیں ناکام

عون کے حصہ کے سلسلہ میں اختلاف اور شیعہ جوڑی کی طرف سے غور وفکر کرنے کو ترجیح
بدھ, 8 January, 2020 - 11:15
کل "مستقبل بلاک" کے اجلاس کے منظر کو دیکھا جا سکتا ہے (قومی ایجنسی)
علاقائی تناؤ کی وجہ سے نئی لبنانی حکومت کی تشکیل کے سلسلہ میں مزید پیچیدگی پیدا ہو چکی ہے جبکہ اس سے قبل بھی نامزد صدر حسان دیاب اور صدر جمہوریہ جنرل مائکل عون کے مابین عون کے                  حصہ میں ہونے والے تین وزیروں کے ناموں کے سلسلہ میں کچھ اختلافات تھے اور اس کے علاوہ وزیر جبران باسیل نے بھی چند وزراء کے ناموں کے سلسلہ میں تحفظ اختیار کیا تھا اور اسی اقدام کی وجہ سے حکومت کے اعلان کی کوششوں کو ناکامی کا سامنا کرنا پڑا ہے۔
          تصنیف کی کاروائی کی نگرانی کرنے والے ایک ذمہ دار نے کہا ہے کہ علاقائی صورتحال کی وضاحت کے منتظر امل اور حزب اللہ پر مشتمل شیعہ جوڑی نے جلدی نہ کرنے کو ترجیح دیا ہے اور ایک ذمہ دار نے الشرق الاوسط سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا ہے کہ دیاب کا طرز فکر 3 جنوری سے پہلے کے لئے موزوں ہے لیکن اس کے بعد کے لئے موزوں نہیں ہے اور اسی وجہ سے وژن کی وضاحت کے سلسلہ میں انتظار کرکے غور وفکر کرنا بہتر ہے اور انہوں نے اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا کہ شیعہ جوڑی حکومت بنانے کی کاروائی میں رکاوٹ نہیں بنے گی کیونکہ انہوں نے شیعہ وزرا کے نام صدر کے حوالے کر دئے ہیں۔
          گذشتہ روز نامزد وزیر اعظم نے آخری معاہدہ کے سلسلہ میں تبادلۂ خیال کرنے کے لئے صدر عون سے ملاقات کی ہے اور دیاب نے کوئی بیان دیئے بغیر بعبدا محل چھوڑ کر چلے گئے ہیں اور باخبر ذرائع نے بتایا ہے کہ دیاب نے اپنی تشکیل کا مسودہ صدر جمہوریہ کو پیش کیا ہے لیکن انھوں نے اپنے موقف کا اعلان کرنے سے پہلے مزید غور وفکر کرنے کو ترجیح دی ہے۔(۔۔۔)
بدھ 013 جمادی الاول 1441 ہجرى - 08 جنوری 2020ء شماره نمبر [15016]

انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا